NEWS

30-December-2016

پاکستان فیڈرل یونین آف کالمسٹ کے نومنتخب صدر فرخ شہباز وڑائچ، جنرل سیکریٹری نور الہدی،،سینئر نائب صدر فرید رزاقی،
نائب صدر اختر ایوب خان ، انفار میشن سیکریٹری حافظ محمد زاہد دیگر عہدیداران کو سید مصطفی کمال کی مبارکباد
نو منتخب صدر ، جنرل سیکریٹر ی دیگرنومنتخب عہد ید اران صحافیوں فلاح بہود اوراداروں میں ان کے ساتھ ہونے والے معاشی استحصال پر آواز بلند کریں ۔مصطفی کمال

کراچی ( )پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین مصطفی کمال نے پاکستان فیڈرل یونین آف کالمسٹ کے نومنتخب صدر فرخ شہباز وڑائچ، جنرل سیکریٹری نور الہدی ،سینئر نائب صدر فرید رزاقی، نائب صدر اختر ایوب خان ، انفار میشن سیکریٹری حافظ محمد زاہد دیگر عہدیداران کو مبارکباد پیش کی ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ قلم کار معاشرے کے سفیر ہوتے ہیں جو معاشرے میں ہونے والے برائیوں اور اچھائیوں کو اپنے قلم کے ذریعے ارباب اختیار تک پہنچاتے ہیں تاکہ وہ ان معلومات کے ذریعے اپنی اصلاح کر سکیں۔ سید مصطفی کمال نے امید ظاہر کی ہے کہ نو منتخب صدر ، جنرل سیکریٹر ی دیگرنومنتخب عہد ید اران صحافیوں فلاح بہود اوراداروں میں ان کے ساتھ ہونے والے معاشی استحصال پر آواز بلند کریں ۔

 

30-December-2016

 

پی ایس پی کے چیئر مین سید مصطفی کمال پاکستان بھرکے طلباء اور نوجوانوں کے رول ماڈل کی حیثیت رکھتے ہیں۔، صدرایس ایف پی انجینئر توصیف اعجاز
طلباء زیادہ سے زیادہ علم حاصل کرنے پر توجہ دیں تاکہ ملک کو لاحق معاشی اور سماجی بحرانوں سے باہر نکال سکیں
پاکستان بھر کے طلباء کو اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان میں شمولیت کی دعوت دی
پاک سر زمین پارٹی اسٹوڈنٹس ونگ249اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان (SFP) کی مرکزی کابینہ کے اجلاس سے خطاب

کراچی ( )پاک سر زمین پارٹی کی اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان کے صدر (SFP) انجینئر توصیف اعجاز نے کہاکہ طلباء زیادہ سے زیادہ علم حاصل کرنے پر توجہ ویں تاکہ ملک کو لاحق معاشی اور سماجی بحرانوں سے باہر نکال سکیں اور اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستانSFP تعلیمات کے فروغ کے لئے ہر اقدامات اٹھائی گی ۔ ان خیالات اظہار انہوں نے پاک سر زمین پارٹی اسٹوڈنٹس ونگ اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان (SFP) کی مرکزی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مصطفی کمال وہ لیڈر ہیں جنہوں نے نفرت اور تعصب کی سیاست کے بجائے پاکستان اور پاکستانیت کی بنیاد پر محبت اور اخوت کی ایک نئی سیاست کی ریت ڈالی ہے.انہوں نے پاکستان بھر کے طلباء کو اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان میں شمولیت کی دعوت دی اور کہا کہ طلبا قوم و ملک کا مستقبل ہوتے ہیں اس لئے ہم پر بحیثیت طالبِعلم سب سے بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بلا تفریقِ رنگ و نسل و مذہب صرف اور صرف وطن پرستی کو بنیاد بنا کر وہ ایک نئے عزم و حوصلہ کے جذبے سے سرشار ہو کر وطن کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کے خواہ ہیں ۔انہوں نے کہاکہ پی ایس پی کے چیئر سید مصطفی کمال نے ہمیشہ اساتذہ کرام کی عزت و احترام کا درس دیاہے اور پاکستان بھرکے طلباء اور نوجوانوں کے رول ماڈل کی حیثیت رکھتے ہیں ۔ انہوں نے امید ظاہر کیا ہے کہ پاکستان بھر کے طلبا اور نوجوان مصطفی کمال کے ساتھ دیکرملک کو ترقی راہ پر گامزن کریں گے۔

 

30-December-2016

رحیم یار شفیع ٹاون میں دہشت گردی کے خودکش دھماکہ پر رضاہارون کا اظہار مذمت
پو لس اہلکاروں نے جس بہادری سے خودکش بمبار کو روکا ہے اس پر میں ان کو خراج تحسین پیش کر تا ہو ں

کراچی ( )پاک سر زمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے رحیم یار شفیع ٹاون میں دہشت گردی کے خودکش دھماکہ پر سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور واقعہ میں زخمی ہو نے والے پولس اہلکاروں سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے.ایک بیان انہوں نے کہا کہ پو لس اہلکاروں نے جس بہادری سے خودکش بمبار کو روکا ہے اس پر میں ان کو خراج تحسین پیش کر تا ہو ں۔ انہو ں کہاکہ اللہ کا جتنا شکر ادا کیا جائے کم اللہ پاک نے رحیم یار خان کو حادثہ سے بچایا لیا ہے۔ا انہو ں نے زخمی ہونے والے پو لیس اہلکاروں کے لے جلد و مکمل صحت یابی کے لے دعا کی۔

 

30-December-2016

کمسن ملازمہ طیبہ کو بہیمانہ تشد د کا نشانہ بنا نے پرپی ایس پی ترجمان کا اظہار مذمت
پا کستان میں کمسن بچوں سے کام کرانا چلڈ لیبر کی خلاف ورزی ہے اور قانو ن کے محافظ ہی اس کی خلاف ورزی کر رہے ہیں، ترجمان

پاک سر زمین پارٹی کے ترجمان نے کمسن ملازمہ طیبہ بہیمانہ تشد د کا نشانہ بنا نے پر سخت تر ین الفاظ مذمت کی ہے .اپنے ایک بیان میں انہو ں نے کہاکہ کمسن طبیہ کو تشد د کا نشانہ بنانا سراسر ظلم و بر بریت ہے۔انہو ں نے کہا کہ پا کستان میں کمسن بچوں سے کام کرانا چلڈ لیبر کی خلاف ورزی ہے اور قانو ن کے محافظ ہی اس کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔انہو ں نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ کمسن طیبہ کو انصاف فراہم کیا جائے اوراس میں ملوث ذمہ دارفرد کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے.انہو ں نے کمسن بچی طیبہ کی جلد و مکمل صحت یا بی کے لے بھی دعا کی۔

 

29-December-2016

بلدیاتی نمائندوں نے بھی کراچی کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا رویہ اختیارکیاہوا ہے۔افتخار عالم
میئر اور ڈپٹی میئر بھی عوام کے مسائل کو حل کرنے کیلئے صرف پریس کانفرنس ہی کر رہے ہیں اورعملی کارکردگی صفر ہے ، سیکریٹری انفارمیشن
عوام کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے عملی اقدامات کیے جائیں

کراچی ( ) پاک سر زمین پارٹی کے سیکریٹری انفارمیشن افتخار عالم نے کراچی کے شہریوں کو درپیش بلدیاتی مسائل پر تشویش کا اظہار کیا۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ کراچی کچرے کا ڈھیر بن چکا ہے اور شہر میں مختلف وبائی امراض جنم لے رہے ہیں جن کی وجہ سے عوام ذہنی قرب میں مبتلا ہیں۔ میئر اور ڈپٹی میئر بھی عوام کے مسائل حل کرنے کیلئے صرف پریس کانفرنس ہی کر رہے ہیں جبکہ عملی کارکردگی صفر ہے ۔انہوں نے کہا کہ میگا سٹی میں مسائل کاانبارہے ، بلند و بانگ دعوں کے باوجودکراچی کے کسی ایک علاقے سے بھی کچرا نہیں اٹھایاجا سکا ہے اورنہ ہی نکاسی آب اور سڑکوں کی مرمت کا کام تاحال شروع کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی نمائندوں نے بھی کراچی کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا رویہ اختیارکیاہوا ہے اور مسائل کے حل کیلئے کوئی عملی اقدامات نہیں کر رہے ،عوام کی خدمت کے بجائے صرف اپنی مراعات کے حصول کے لئے کوشاں ہیں ، شہر کے بلدیاتی ادارے سیاسی وابستگیوں کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں ایسے حالات میں نقصان صرف شہریوں کا ہو رہا ہے،انہوں نے حکام بالاسے مطالبہ کیا کہ عوام کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے عملی اقدامات کیے جائیں تاکہ پاکستان کی معاشی شہ رگ کے شہری سکھ کا سانس لے سکیں اور اس شہر کی کاروباری سرگرمیوں کو بحال کرنے میں مدد ملے۔

 

28-December-2016

ملک میں مضر صحت ،غیر معیاری دودھ کی فروخت کرنے پر پی ایس پی کے ترجما ن کا اظہار تشویش
سپریم کورٹ کی جانب سے مضر صحت دودھ فروخت کے معاملے پرازخودنوٹس لینے کو خوش آئندہ ہے، ترجمان
وزیر اعظم پاکستان، چاروں صو بوں کے وزراء اعلی،فوڈ اتھارٹیز دیگر اعلی حکام ، بچوں کو خالص دودھ کی فراہمی
کے لئے مثبت اقدامات بروئے کارلائے،پی ایس پی ترجمان

پاک سر زمین پارٹی کے ترجمان نے کہاکہ ملک میں مضر صحت ،غیر معیاری دودھ کی فروخت کرنے پرگہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اپنے ایک بیان میں ترجمان نے کہاہے کہ بچوں کو دودھ کا نام پر زہر پلایا جارہا ہے جس کی وجہ سے عوام میں شدیدغم و غصہ اور بے چینی پائی جاتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کی جانب سے مضر صحت دودھ فروخت کے کرنے کے معاملے پرازخودنوٹس لینے کے عمل کو خوش آئندہ قرار دیا ہے۔انہوں نے وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف ،چاروں صوبوں کے وزراء اعلی ، فوڈ اتھارٹیز دیگر اعلی حکام ، بچوں کو خالص دودھ کی فراہمی کے لئے مثبت اقدامات بروئے کارلائے اور ایسی کمپنیاں جو دودھ کے نام پرزہر فروخت کررہی ہیں ان کے خلاف قانونی کاررائی کی جائے۔

 

28-December-2016

پاکستان پیپلزپارٹی بدین سے تعلق رکھنے والے محفور یار علی، منان، فاروق ، سرفراز دیگر سینکڑوں افراد کے ہمراہ پاک سر زمین پارٹی میں شمولیت کا علان
پارٹی کے پیغام کو ملک کے کونے کونے میں پھیلانے میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے۔ سید مصطفی کمال چیئر مین پی ایس پی

پاکستان پیپلزپارٹی بدین سے تعلق رکھنے والے محفور یار علی، منان، فاروق ، سرفراز دیگر سینکڑوں افراد کے ہمراہ پاک سر زمین پارٹی میں شمولیت کا علان کر دیا ۔ یہ اعلان انہوں نے پاکستان ہاؤ س میں پی ایس پی کے چیئر مین سید مصطفی کمال سے ملاقات کے دوران کیا۔ سید مصطفی کمال نے پی ایس پی میں شمولیت اختیار کرنے والے افراد کو خوش آمدیدکہتے ہوئے پارٹی کے پیغام کو ملک کے کونے کونے میں پھیلانے میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں۔
================================

پی ایس پی ورکرز فیڈریشن کے مرکزی جوائنٹ سیکریٹری سید عمران زیدی کے چھوٹے بھائی سید ذیشان علی کے انتقال پر سید مصطفی کمال کا اظہار افسوس
پی ایس پی کے سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغر احمد ، وائس چیئر مین وسیم آفتاب اورورکرز فیڈریشن کے صدر تو قیر احمد نے
عمران زیدی کے چھوٹے بھائی سید ذیشان علی کے انتقال پران کے گھر جا کراہل خانہ سے ملاقات کی

پاک سرزمین پارٹی کے چیئر میں سید مصطفی کمال نے پی ایس پی ورکرز فیڈریشن کے مرکزی جوائنٹ سیکریٹری سیدعمران زیدی کے چھوٹے بھائی سید ذیشان علی کے انتقال پر دکھ افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ایک تعزیتی بیان میں انہوں نے کہاکہ مرحومہ کے تمام سو گوار لواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کا اظہار کر تے ہوئے انہیں صبر کی تلقین کی ۔ انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالی مرحوم کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے اور سو گوار لواحقین کو ایہ صدمہ برداشت کرنے کا حوصلہ عطا کریں۔ امین
دریں اثناء پی ایس پی کے سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغر احمد ، وائس چیئر مین وسیم آفتاب اورپاک سرزمین پارٹی ورکرز فیڈریشن کے صدر تو قیر احمدنے ورکرز فیڈریشن کے مرکزی جوائنٹ سیکریٹری عمران زیدی کے چھوٹے بھائی سیدذیشان علی کے انتقال پران کے گھر جا کراہل خانہ سے ملاقات کی اور پی ایس پی کے چیئر مین سید مصطفی کمال کی جانب سے تعزیت اور مرحوم کے مغفرت و بلند درجات کے لئے دعا کی۔

27-December-2016

قادریہ ٹرسٹ برمنگھم کے سربراہ صاحبزادہ پیر طیب الرحمان قادری کے ہمراہ دیگر علماء اکرام کا پاکستان ہاؤس میں چیئر مین سید مصطفی کمال سے ملاقات
ملاقات میں وفد کی جانب سے پی ایس پی چیئرسید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی سمیت پوری پاک سرزمین پارٹی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار

قادریہ ٹرسٹ برمنگھم کے سربراہ صاحبزادہ پیر طیب الرحمان قادری کے ہمراہ دیگر علماء اکرام نے پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی سیکریٹریٹ پاکستان ہاؤس میں چیئر مین سید مصطفی کمال سے ملاقات ۔ ملاقات میں وفد کی جانب سے پی ایس پی چیئرمین سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی سمیت پوری پاک سرزمین پارٹی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار اور پارٹی کی کامیابی کیلئے خصوصی دعاکی گئی۔اس مو قع پر پی ایس پی کے وائس چیئر مین وسیم آفتاب ، افتخار اکبر رندوھاوا ،سیکریٹری انفار میشن افتخار عالم اور نیشنل کونسل کے رکن آصف حسنین بھی موجود تھے۔ پی ایس پی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے صاحبزادہ پیر طیب الرحمان قادری کو پاکستان ہاؤ س آنے پر تہہ دل سے شکریہ ادا کیااور خوش آمدید کہا۔

 

27-December-2016

پاک سر زمین پارٹی کے وفد نے معروف عالم دین طالب جوہری کی کراچی کے مقامی اہسپتال میں عیادت
چیئر مین پی ایس پی سید مصطفی کمال کی جانب سے خیریت دریافت

پاک سرزمین پارٹی کے سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغیر احمد نے معروف عالم دین طالب جوہری کی کراچی کے مقامی اہسپتال جاکر عیادت کی اور چیئر مین پی ایس پی سید مصطفی کمال کی جانب سے خیریت دریافت کی اور گلدستہ پیش کیا اس مو قع پر پی ایس پی کے وائس چیئر مینوسیم آفتاب اور ممبر نیشنل کونسل سید قمر اختر بھی موجود تھے۔ اس مو قع پر طالب جوہری کی جلد و مکمل صحت یابی کیلئے خصوصی دعائیں کی گئی۔

27-December-2016

ممتاز اسکالر اورمختلف علماء کرام کا پی ایس پی میں شمولیت کا اعلان
علماء کرام معاشرے کا اہم جز ہیں، دینی تعلیمات کے فروغ کیلئے علماء کا کردار قابل تعریف ہے ، سید مصطفی کمال


کراچی ( ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال سے پاکستان ہاؤس میں کراچی سے تعلق رکھنے والے علماء کرام کے وفد کی ملاقات، حیات فاؤنڈیشن کے سربراہ اور ممتاز اسکالر فاروق حیات، مفتی وحیدقادری، مولانا طاہر، نبیل ناصرعلامہ راشداقبال اور دیگر علماء کا پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کا اعلان، اس موقع پر ممبر سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی نیک محمد اور پاک سرزمین ورکرز فیڈریشن کے صدر توقیر احمد بھی موجود تھے۔ علماء کرام کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے سید مصطفی کمال نے کہا کہ علماء کرام معاشرے کا اہم جز ہیں، دینی تعلیمات کے فروغ کیلئے علماء کا کردار قابل تعریف ہے، عوام میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی پیدا کرنے کیلئے اپنا کلیدی کردار اداکرنا ہوگا۔،علماء کرام کے وفد نے پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی اور صدر انیس قائم خانی کے نظریہ سیاست پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے پی ایس پی کے ساتھ قدم بہ قدم چلنے کا اعلان بھی کیا۔

Published in Dawn December 24th, 2016

Myth of MQM, Mohajirs being inseparable is no more, Kamal tells big PSP public meeting

HYDERABAD: Pak Sar­za­meen Party chairman Syed Mustafa Kamal has said that today’s public meeting of his party in the Pucca Qila ground has buried the myth that Mohajirs and the Muttahida Qaumi Movement of Altaf Hussain are inseparable. “This narrative was used to scare the establishment … as if the MQM is done away with, Mohajirs will opt for a revolt”, he said.

He was addressing the first ever PSP public meeting in Pucca Qila ground on Friday evening. PSP senior vice-chairman Anis Ahmed Advocate, vice-chairman Ashfaq Mangi, Dr Saghir Ahmed, Atta Kurd, Iftikhar Randhawa and others also spoke.

“You have rejected this narrative that has been sold over the last 30 years to the establishment, governments and intellectuals. These stakeholders were made to believe that Urdu-speaking people cannot be separated from the MQM or Altaf Hussain regardless of the fact how corrupt their leadership is or even if it is working for [the Indian intelligence agency] RAW”, said Mr Kamal.

Then came Aug 22, when followers of Altaf Hussain staged a drama to sell this narrative again, he said, and noted that the establishment, analysts and government bought it in spite of the fact that he [Mr Kamal] had been telling them that Mohajirs were an educated nation whose forefathers gave sacrifices of two million people.

He said he had trust in this community and this trust was manifested in [the strength of] this gathering.

“I feel proud today. You have made it clear to them that you are educated, you believe in harmony and civilised attitude; and you have buried that narrative,” he said.

The PSP chief said Mohajirs had proved that they were with the Pakistani flag and those who considered them ‘insects’ should mend their ways. Another lie associated with the Urdu-speaking people was that they wanted to separate urban areas from Sindh. “The Urdu-speaking people have buried this lie as well by hosting different communities here in this ground,” he said.

He repeated his earlier observations that today 350,000 newborns would die from malnutrition and there was stunted growth among children but nobody cared about it. He said he did not want to become a leader of Kashmir but to be leader of those dying newborns. “Ten million children face stunting and we have become accustomed to observing anniversaries. No one knows that the National Accountability Bureau really curbs corruption. Political leadership is afraid of holding a census in the country and in the absence of realistic statistics of population, one could not expect proper planning for development. He said that it was the apex court that got the local government elections held.

According to him, Karachi is among the 10 cities where people do not want to live. “Your watchmen [leaders] have themselves become dacoits,” he remarked. He said that 2017 would mark the year of people getting their rights because he would not wait until 2018. He said he did not believe in intrigues but he would not let people die silently either. Cities and their streets would give judgements in favour of people because the PSP would stage protests on people’s issues, he added.

Mr Kamal urged people to surround their elected representatives as well as chairmen of union committees because nobody was going to stop them from holding such protests.

“Now you [Mohajirs] do not have to send eight per cent of commission to London as the fee of ‘Bhai’s’ lawyers or for his lobbying,” he said.

When people would start protesting under the aegis of the PSP, the very parliamentarians whose resignations were being demanded [by Altaf Hussain] would certainly do that. He announced that a similar ‘Awami adalat’ in Karachi on Jan 29 would be held, which would prove to be the last nail in the coffin of ‘mafaad parast’ elements (vested interests).

The PSP chief urged Prime Minister Nawaz Sharif to redress grievances of Sindh instead of “mortgaging” it. PPP chairman Bilawal Bhutto-Zardari should serve people if he wanted to become premier, he said, and regretted a statement made by the Sindh chief minister in the provincial assembly that 19,000 jobs were to be given to PPP activists alone.

Government should redefine its priorities because no one was going to be their partner in crime now. The Urdu- and Sindh-speaking people of this province must believe in coexistence and protect rights of one another, he said.

Mr Kamal said that the Urdu-speaking community was justified in complaining that no one from the community could become a chief minister “but it does not mean they should become agents of RAW”.

He urged PSP activists to befriend activists of other political parties including the MQM, Jeay Sindh Qaumi Mahaz and other factions of the Jeay Sindh Tehreek.

Mr Kamal also urged the prime minister to establish an international-level public sector university and a 200-bed hospital with all medical facilities in Hyderabad. Regarding powers for LG representatives, he argued that if mayors claimed they were without powers, then why did they not resign?

PSP president Anis Qaimkhani told the audience that opponents of his party were shivering after seeing a sea of people here in this ground. He said mayors of Karachi and Hyderabad and [MQM] parliamentarians should mend their ways. Otherwise, people would hold them accountable, he warned.

24-December-2016

 

حيدرآباد ۾ پڪي قلعي تي پي ايس پي جو تاريخي جلسو، متحده کي چئلينج، مهاجر غدار ليڊر کي ڪڏهن به قبول نه ڪندا: مصطفيٰ ڪمال

حيدرآباد (رپورٽ: پون ڪمار) حيدرآباد ۾ پڪي قلعي تي پي ايس پي جو تاريخي جلسو، متحده کي چئلينج، 29 جنوري تي ڪراچي ۾ جلسو ۽ چونڊيل مڪاني نمائندن جو گهيراءُ ڪرڻ جو اعلان، پاڪ سرزمين پارٽي جي سربراهه مصطفيٰ ڪمال چيو آهي ته مهاجر قوم ايم ڪيو ايم لنڊن کي رد ڪري ثابت ڪيو آهي ته هو پاڪستان کي روشن ڏسڻ چاهين ٿا، گذريل 30 سالن کان مهاجر قوم جي نالي تي مهاجرن جو استحصال ڪيو ويو، هڪ ئي پارٽي مهاجرن ۽ سنڌين کي پاڻ ۾ وڙهائي ڪيترن ئي جانين جو نذرانو ورتو، اسان اهڙي نظام خلاف آهيون، پاڪستان ۾ رهندڙ مهاجر،سنڌي، بلوچ ۽ پنجابي پاڻ ۾ ڀائر آهن، سڀ نفرتون ختم ڪري سڀني کي هڪ ٿي لٽيرن کي ملڪ مان ڀڄائڻو پوندو، هن اهڙو اظهار پاڪستان سرزمين پارٽي طرفان ڪالهه پڪي قلعي ۾رٿيل جلسي کي خطاب ڪندي ڪيو، هن چيو ته گذريل 7 سالن کان پاڪستان جي حڪمرانن عوام سان ويساهه گهاتيون ڪيون، گذريل ٽن سالن ۾ 8 ارب روپين جو قرض ورتو ويو، جيڪو 70 سالن جي رڪارڊ ۾ ورتو نه ويو هوندو، حڪمران پاڪستان ۾ آدمشماري ڪرائڻ کان لنوائي رهيا آهن، گذريل 18 سالن کان آدمشماري ناهي ٿي، حڪمران آدمشماري کان خوفزده آهن، هن چيو ته هاڻوڪن ميئر ۽ چيرمينن چونڊن کان اڳ ۾ وڏيون دعوائون ڪري عوام کان ووٽ ورتو ۽ هاڻي چون ٿا ته اسان بي اختيار آهيون، اسان وٽ اختيار ناهن انهن کي اها ڳالهه اڳ ۾ ڇو ياد نه آئي؟ هن چيو ته سنڌ معدني وسيلن سان مالا مال هئڻ باجود سنڌي ماڻهو اڄ به بک ۽ بدحالي جي ڪري خودڪشيون ڪرڻ تي مجبور آهن، ملڪ ۾ ساڍا ٽي لک ٻار صاف پيئڻ جو پاڻي ۽ خوراڪ نه ملڻ ڪري فوت ٿين ٿا، ملڪ هلائيندڙن ۾ خرابي آهي، هن چيو ته هڪ ڪروڙ ٻار سنڌ  فاٽا ۽ بلوچستان ۾ غذائي کوٽ ۽ گندو پاڻي واپرائڻ سبب ذهني ۽ جسماني بيمارين ۾ مبتلا آهن، هن چيو ته ملڪ ۾ آرمي پبلڪ اسڪول ۽ دهشتگردي جهڙا واقعا پيش اچن ٿا، ڇا مائرون اهڙي ماحول ۾ پنهنجي ٻارن کي اسڪولن ڏانهن موڪلي سک سان ويهي سگهن ٿيون؟ مصطفيٰ ڪمال چيو ته الطاف حسين ملڪ کان ٻاهر رهي مهاجرن جي نالي تي مهاجر قوم جو استحصال ڪندو رهيو ۽ ڪيترن ئي مائرن کان پنهنجا ٻچا کسيا، مهاجر قوم ڪڏهن به اهڙي غدار ليڊر کي قبول نه ڪندي، ايم ڪيو ايم طرفان شهرين کان ڪڏهن فطري ته ڪڏهن زڪوات جي نالي سان پئسا وٺي لنڊن اماڻيا ويندا هئا، نه ڏيڻ جي صورت ۾ الطاف حسين طرفان پنهنجي پارٽي جي ايم اين اي، ايم پي ايز ۽ سيڪٽرن جي انچارج طرفان ماڻهن جي گهرن جي ٻاهران هٿيار کڻي خوفزده ڪيو ويندو هو، هاڻي اهو دور ختم ٿي چڪو آهي، هن چيو ته الطاف جي ڊرامي کانپوءِ  مهاجرن کي هيسائڻ لاءِ فاروق ستار جي شڪل ۾ هڪ ٻيو واپاري گروپ سرگرم ٿيو آهي، عوام انهن کي به رد ڪيو آهي. عوام پڪي قلعي ۾ گڏ ٿي ثابت ڪيو آهي ته هو پي ايس پي سان گڏ آهن ۽ ايم ڪيو ايم جي نالي سان مهاجر قوم جي ڪابه جماعت ناهي، مهاجرن کي ڪيڙا ۽ ماڪوڙا سمجهڻ وارا پاڻ کي درست ڪن نه ته عوام انهن جو حشر برو ڪندو، عوام لنڊن واري الطاف واري ايم ڪيوايم مان جان ڇڏائي آهي ته وري ٻيوگروپ پاڪستان ايم ڪيو ايم جي نالي سان سرگرم ٿيو آهي، هن چيو ته گذريل 70 سالن کان ملڪ ۾ بيڊ گورننس ۽ ملڪ حڪمرانن جي نااهلي جي ڪري ماڻهو سٺي صحت، تعليم پاڻي، بجلي، گئس ۽ ٻين سهولتن کان محروم آهن، چونڊيل نمائندن عوام جي مفادن لاءِ ڪم نه ڪيو ته انهن کي استعيفيٰ ڏيڻي پوندي، 29 جنوري تي ڪراچي ۾ جلسو ڪري عوامي عدالت لڳائي ويندي، هن چيو ته نوازشريف سڄي ملڪ جو وزيراعظم آهي هو پنجاب جو وزيراعظم نه آهي، سنڌ کي هن گروي رکي ڇڏيو آهي، ٿر جو هڪ ڀيرو چڪر هڻي ايئرڪنڊيشن کي سڄائڻ سان پاڪستان جا ماڻهو خوش نه ٿيندا، هن بلاول ڀٽو زرداري کان مخاطب ٿيندي چيو ته نعرن سان ڪم نه هلندو، وزيراعظم بڻڻو آهي ته سنڌ ۽ پاڪستان جي ماڻهن جي خدمت ڪرڻي پوندي، هن چيو ته چيو ته سنڌ جو وزيراعليٰ اسيمبلي جي ٽريس ۾ به چوي ٿو ته  90 هزار نوڪريون پ پ جي ڪارڪنن لاءِ آهن، ڇا ٻيا سنڌ ۾ رهندڙ سنڌي، پنجابي، اردو ڳالهائيندڙ ۽ ٻين جو حق ناهي؟ ملڪ جي حڪمرانن کي عوام سان ڪوبه لڳاءُ ناهي هو صرف پنهنجي مفادن خاطر ڪم ڪن ٿا. سنڌ جا نوجوان ڊگريون هٿن ۾ کڻي  روڊن تي گهمندي نظر ايندا آهن، 2017 پاڪستان جي عوام جي حق حاصل ڪرڻ جو آهي، پاڪ سرزمين پارٽي پنهنجي دور ۾ سنڌ جي نوجوانن کي نوڪريون، بجلي، گئس ۽ ٻيون سهولتون فراهم ڪندي، ان موقعي تي پاڪ سرزمين پارٽي جي اڳواڻ انيس قائمخاني چيو ته اڄ پڪي قلعي تي ماڻهن جو ايڏو وڏو انگ ڏسي ڪن ماڻهن کي خوشي ته ڪن کي وري ساڙ ٿيندو هوندو، هن چيو ته گذريل 21 سالن کانپوءِ ڪنهن ٻي جماعت حيدرآباد جي پڪي قلعي ۾ عوامي عدالت لڳائي آهي، جيڪو حيدرآباد جي عوام لاءِ وڏو اعزاز آهي، پي ايس پي کي عوام جي خدمت ڪرڻ کان ڪابه قوت نٿي روڪي سگهي، وفاقي ۽ سنڌ حڪومت کي خبردار ٿو ڪريان ته هو پاڪستان جي عوام جي مفادن لاءِ ڪم ڪن، 2018 جي اليڪشن ۾ پي ايس پي ڪاميابي ماڻيندي. هن چيو ته مصطفيٰ ڪمال کي موقعو مليو ته هن ڪراچي کي سينگاري ڏيکاريو، پاڪستان جي خدمت جو موقعو مليو ته هو پاڪستان ۽ قوم کي ترقي جي رستي تي وٺي هلندو، حيدرآباد جي عوام گڏ ٿي تاريخ رقم ڪئي آهي ته هو پاڪستان جي جهنڊي سان پيار ڪن ٿا. جلسي کي خطاب ڪندي انيس ايڊووڪيٽ چيو ته پاڪستان جي حڪمرانن عوام کي دوکو ڏنو ۽ مسلسل عوام کان ووٽ وٺندا رهيا، 50 سالن کان ملڪ تي ساڳين ئي ماڻهن حڪمراني ڪئي، انهن پنهنجا پيٽ ڀريا ۽ غريب ماڻهن کي غربت ڏانهن ڌڪيو، پاڪستان ۾ خوراڪ جي کوٽ جي ڪري ٻارن جا قد ننڍا ۽ موت ۾ اضافو ٿي رهيو آهي، اها ئي صورتحال رهي ته مستقبل ۾ اسان ڪوڏو هي رهنداسين . هن چيو ته نوجوان قيادت عوام جو مستقبل آهن، انهن کي ئي فيصلو ڪرڻو آهي ته ڪهڙن اميدوران کي کٽرائڻو آهي . ان موقعي تي پاڪ سرزمين پارٽي جي ٻين اڳواڻن به خطاب ڪيو

Myth of elitist Mohajir politics shattered, says Kamal

HYDERABAD: The myth of exclusive Mohajir ethnic politics has been shattered, senior Pak Sarzameen Party (PSP) leader Mustafa Kamal said on Friday.

Speaking at the public meeting inside the Pakka Qila here, the PSP leader said: “The establishment, government, intellectuals, media and other people were always sold this impression (by the MQM) that Mohajirs can never break (away) from Altaf Hussain or (disown) ethnic politics even if they knew that their leadership is corrupt, inefficient and (working as) agents of RAW (the Indian spy agency),” said Kamal.

Thousands of people had gathered at the sports ground to listen to the PSP leaders rake MQM-London and MQM-Pakistan leaders over the coals and unveil the party’s future political strategy.

“But today, Mohajirs have broken this myth and demonstrated that they are with wisdom, education, harmony, civilization and (support) their country.”

The PSP succeeded in staging its maiden show of strength in the locality, which remained an MQM stronghold for decades.

The densely-populated fort, built in the latter half of the 18th century by the Kalhoro dynasty, holds the same importance for the MQM as its headquarters ‘Nine-Zero’ in Karachi.

Except for MQM, no other party was able to organise a public meeting inside the fort since 1986.

He told the crowd that his party would not wait for the 2018 general elections, but he planned to mobilise the people much ahead of this date.

Advising his supporters to press their elected representatives to serve them, Kamal urged them to ensure courteous conduct while doing so. “The hotline between London and Rehman Malik (the former federal interior minister) must not stop you from exercising this democratic right.” He also announced to hold a public meeting in Karachi on Jan 29 next year.

Deploring the ineffectiveness of incumbent elected governments at federal and provincial level, he pointed out that malnutrition killed 350,000 children every year despite the fact that Pakistan was a food exporting country.

“I want to do politics for these children and their mothers. I don’t want to do politics for the United States, Afghanistan and Kashmir.”

PSP’s chairman Anis Qaimkhani recalled the historical background of the Qila and said it was used to incite divisive politics of ethnicity in the 1980s. “But today, the residents of the same Qila are welcoming Sindhis, Punjabis, Balochs and Pakhtuns.”

Former health minister Dr Sagheer Ahmed, Ashfaq Mangi, Iftikhar Randhawa and others also spoke on the occasion.

23-December-2016

اب ہم خاموشی سے مرنے والے نہیں بلکہ کارکنان اپنے مسائل لے کر ایم این ایز، ایم پی ایز اور کاؤنسلرز کا گھیراؤ کریں۔ سید مصطفی کمال
عوام کے مسائل کے حل کے لیے سنجیدہ ہیں،ایم این اے اور ایم پی ایز عوام کی خدمت کریں ورنہ عوام احتساب کرے گی ،انیس قائم خانی

حیدرآباد( ) چیئر مین پاک سر زمین پارٹی سید مصطفی کمال حیدرآباد میں عوامی جلسے سے 1601988 میں شہید ہونے والے سانحہ پکا قلعہ کے شہیدوں کے درجات کی بلندی کے لیے دعا کرتے ہوئے کہا کہ ان کے پاک خون کے صدقے ہمیں اللہ پاکستان کی خدمت کے لیے قبول کرلے،حیدرآباد کی عوام نے پاک سر زمین پارٹی کی آواز پر لبیک کہا ہے ،آنے والی نسلوں کے بہتر مستقبل کے لئے آج ہی مبارکباد دیتا ہوں ،جھوٹ پر مبنی سیاست کو آج پکا قلعہ میں عوام نے دفن کر دیا، ملک کے دشمنوں کی جانب سے غلط تاثر دیا جاتا تھا کہ الطاف حسین اور مہاجر الگ نہیں ہو سکتے ،الطاف حسین کی سیاست ختم ہونے کے بعد ایک دوسری ایم کیو ایم سامنے آئی اور سازش کی کہ مہاجر صرف ایم کیو ایم میں ہی رہے گا اور یہاں تک تاثر دینے کی کوشش کی کہ ایم کیو ایم والے بھارت کے ٹینکوں پر بیٹھ کر بھی آئے تو مہاجر ان کے ساتھ ہونگے،الطاف حسین نے اس محبِ وطن قوم کو کر راء کے ایجنٹس ہونے کا سر ٹیفکیٹ دے دیا ،مہاجروں کا نام اور ان کا ووٹ لے کر اپنی کرپشن اور اپنی خرافات کو چھپایا جاتا تھا، لیکن مہاجروں نے ہر موقع پرثابت کیا کہ وہ صرف سبز ہلالی پرچم کے ساتھ ہیں ،اورپاکستان میں تمام قومیتوں کے ساتھ مل کے رہنا چاہتے ہیں ،مہاجروں کو قومی دھارے سے نکال کر علیحدگی پسند قوم کا تاثر دیا گیا،مہاجر صرف ایم کیو ایم کے ساتھ ہیں یہ تاثر اب ختم ہو گیا بلکہ یہ ثابت ہو گیا کہ مہاجر علم، تہذیب اور بھائی چارگی اور امن کے ساتھ ہیں ،آج اس ملک میں جو غذائی اعتبار سے خود کفیل ہے وہاں ناقص غذا کی وجہ سے 350000 بچے سالانہ مر رہے ہیں ،انہیں مائیں، خاموشی سے دفنا رہی ہیں ہمیں ان ماؤں کا لیڈر بنناہے ،ان 350000 بچوں کے جنازے ایک ساتھ پڑھائیں اور دفنائیں تاکہ حقیقت کا احساس ہو،ملک میں 1 کڑوڑ بچے صاف پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے ماندہ جسمانی کمزوری کا شکار ہیں ان بچوں کے لیے ہم کتنے ہسپتال بنائیں گے ،اے پی ایس اسکول کے واقع کو دو سال ہو گئے لیکن آج بھی ہمارے بچے محفوظ نہیں ،حکمران ایک واقعہ کے بعد دوسرے واقعہ کا انتظار کرتے ہیں ،ہم پاکستانیوں کا ہر بچہ قرض میں ڈوب چکا ہے ،ہماری آنے والی نسلیں بھی اس قرض کے بوجھ تلے دبی ہوئی ہیں ،3 دہائیوں سے ملک میں مردم شماری نہیں کرائی جا سکی،بغیر کسی پلاننگ کے اربوں روپے بجٹ میں لٹائے جا رہے ہیں ،حکمران کہتے ہیں بلدیاتی ادارے جمہوریت کے ستون ہیں ،لیکن چیف جسٹس کے کہنے پر زبردستی بلدیاتی الیکشن کرائے گئے ،حیدرآباد جو کہ تیسرا بڑا شہر تھا وہاں لوگ ملک ریاض کے دسترخوانوں پر کھانا کھا رہے ہیں ،کیا حیدرآباد اور ملک کا یہ حال چند دنوں میں ہوا؟160جنہیں عوام نے ملک کی چوکیداری دی وہ ہی چور نکلے ،ایم این ایز، ایم پی ایز اور کاؤنسلرز موجود تھے لیکن عوام کی خدمت نہیں کی،الطاف حسین کو باپ ماننے والے آج اسی باپ کے کہنے پر استفیٰ نہیں دے رہے تاکہ اپنی کرپشن کا پیسہ محفوظ کرنے کے لیے استفیٰ نہیں دینا چاہتے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاک سرزمین پارٹی کی صف اول میں وہ لوگ ہیں جو عوام کی خاطر مراعات اور طاقت چھوڑ کر آئے ،یہ واحد پارٹی ہے جہاں آنے والے اپنے عہدے چھوڑ کر آتے ہیں ،آئندہ سال ملک بھر کی عوام کے لئے حقوق حاصل کرنے کا سال ہوگا ،ابقوم نے فیصلہ کر لیا ہے کہ کیا راستہ اختیار کرنا ہے ،یہ معاشرہ ظالم کی وجہ سے نہیں بلکہ ظلم سہنے والوں کی وجہ سے برباد ہو رہا ہے ،شہروں کو کچرا کنڈیوں میں تبدیل ہوتا ہوا نہیں دیکھ سکتے ،نہ بچوں کو مرنے کے لیے نہیں چھوڑ سکتے ہیں،اب ہم خاموشی سے مرنے والے نہیں بلکہ کارکنان اپنے مسائل لے کر ایم این ایز، ایم پی ایز اور کاؤنسلرز کا گھیراؤ کریں کہ یا تو ہماری ماؤں بہنوں کے مسائل حل کریںیا استفی دیں،اس موقع پر انہوں نے 29 جنوری کو کراچی میں عوامی عدالت لگانے کا اعلان کیا اوربلاول بھٹو کو مخاطب کر تے ہوئے کہا کہ اگلا وزیراعظم بننا ہے تو عوام کی خدمت کرنی ہوگی ،وزیر اعلٰی سندھ اپنا قبلہ درست کریں وہ پیپلزپارٹی کے نہیں سندھ کے وزیر اعلٰی ہیں ،موجودہ حکمران جان لیں ان سے زیادہ طاقت ور فرعون بھی مٹی میں مل گئے ،انہوں نے کہا کہ ایک روٹی سب میں برابری کی بنیاد پر بانٹنا چاہتے ہیں ،کسی کی روٹی چھین کر اپنے بچوں کو خوشیاں نہیں دے سکتے ،سندھیوں کی طرف باہیں پھیلا کر انہیں محبت کی دعوت دیتے ہیں ،مہاجروں کے ساتھ زیادتی ہوئی ہے لیکن اس کا بدلہ ریاست سے نہیں لے سکتے ،الطاف حسین نے یہ زیادتیاں دکھا کر مہاجروں کے جذبات کا فائدہ اٹھایا ،طالبان اور بی ایل اے والوں کو مخاطب کر کے کہتا ہوں کہ بھارت انہیں ان کے حقوق دلانے کے لیے پیسہ نہیں دے رہا توسب محبت بانٹیں اور متحد ہو جائیں ۔انہوں نے حکمرانوں سے مطالبہ کیا کہ حیدرآباد میں یونیورسٹی اور ہسپتال کے لیے جگہ مختص کی جائے.جمہوریت ایوانوں میں نہیں عام شہری کی دہلیزپر چا۔پاک سر زمین پارٹی کے صدر انیس قائم خانی نے حیدرآباد پکا قلعہ میں عوام کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج عوام کے مسائل کے حل کے لئے عوامی عدالت لگائی گئی ہے ،آج حیدرآباد پکا قلعہ میں عوام نے ثابت کردیا کہ کوئی طاقت پاک سر زمین پارٹی کا راستہ نہیں روک سکتی ،آج پکا قلعہ اور گردو نواح میں موجودعوام کا سمندر ہماری کامیابی کی نوید ہے ،حیدرآباد نے ماضی میں بھی سیاست کا رخ تبدیل کیا تھا اور آج ایک مرتبہ پھر راء کے ایجنٹس کو مسترد کر کے سیاست کا رخ تبدیل کر دیا،عوام کے توسط سے وفاقی اور صوبائی حکومت کو تنبیہ کرنا چاہتے ہیں کہ عوام کے مسائل کے حل کے لیے سنجیدہ ہیں،ایم این اے اور ایم پی ایز عوام کی خدمت کریں ورنہ عوام احتساب کرے گی ،پاک سرزمین پارٹی کسی علاقے کی نہیں پورے ملک کی جماعت ہے ،پکا قلعہ گراؤنڈ میں تمام قومیتوں سے تعلق رکھنے والے افراد موجود ہیں اور یہ پاکستانی قوم کی آپس میں ایک دوسرے سے محبت کا ثبوت ہے،2018 کا الیکشن پاک سر زمین پارٹی کا ہوگا،انہوں نے کہا کہ مصطفٰی کمال کو جانتا ہوں انہیں جب موقع ملا تو کراچی کا نقشہ تبدیل کردیا اور اب اگردوبارہ موقع ملا تو ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کردیں گے . اس موقع پر پکا قلعہ حیدرآباد میں شاندار اتش بازی کا مظاہرہ کیا گیا ۔

23-December-2016

مہاجر قوم نے آج پی ایس پی کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے.مصطفی کما ل.
مہا جر قوم نے اس تا ثر کے وہ کسی بھی ایم کیو ایم کے ساتھ جڑ رہے گے.چا ہئے کتنی ہی کر پٹ کیوں نہ ہواس تا ثر کو دفن کر دیا ہے.

اس تا ثرکو دفن کر نے پر میں تمہیں خراج تحسین اور سلام پیش کر رہوں .مصطفی کمال
پکا قلعہ میں مہا جروں نے تمام قو میتوں کی میز بانی کر کے ان لوگوں کے اس تاثر کوکہ مہا جرپاکستان کے ساتھ نہیں
2017سند ھ کی عوام کے اختیارات لینے کا سال ہو گا .مصطفی کمال
کر اچی میں عوامی قوت کا مظاہرہ 29 جنوری 2017 کو ایک عظیم الشان جلسہ منعقد ہو گا160
پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے مہا جر قوم نے آج پی ایس پی کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے ,مہا جر قوم نے اس تا ثر کے وہ کسی بھی ایم کیو ایم کے ساتھ جڑ رہے گے.چا ہئے کتنی ہی کر پٹ کیوں نہ ہواس تا ثر کو دفن کر دیا ہے اس تا ثرکو دفن کر نے پر میں تمہیں خراج تحسین اور سلام پیش کر رہوں انہوں نے کہاکہ پکا قلعہ میں مہا جروں نے تمام قو میتوں کی میز بانی کر کے ان لوگوں کے اس تاثر کوکہ مہا جرپاکستان کے ساتھ نہیں سند ھ کی عوام کے اختیارات لینے کا سال ہو گا انہوں نے کہاکہ ، کر اچی میں عوامی قوت کا مظاہرہ 29 جنوری2017 کو ایک عظیم الشان جلسہ منعقد ہو گا۔ ان خیالات اظہار انہوں نے پکا قلعہ میں تاریخ ساز جلسہ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ عوام کو ان کا حق دینا ہو گاچند افراد کے ہاتھوں میں اختیارات اور طاقت رکھ کر کسی ملک. صوبے.یا شہر کو نہیں چلایا جا سکتا.ا نہوں نے کہاکہ اج کا جلسہ الطاف حسین اور مہا جر سیاست کے نام قوم کا سودہ کرنے والوں کے خلاف ریفڑنڈم ہے.آج کے عظیم الشان اجتماعی حٰیدر آباد کے لوگوں نے پی ایس پی کو م منیڈنٹ دے دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر تمہیں خراج تحسین پیش کر تا ہوں او رآج تمہیں اس تصور کو مسترد کر دیا ہے کہ مہاجر صرف اور صرف کسی بھی ایم کیوایم اور الطاف حسین صاحب ساتھ ہی رہیں گے چائیے وہ کتنی ہی کرپٹ کیوں نہ ہوتمہیں نے آج یہ ثابت کر دیا کہ تم شعور کو ساتھ ہو، پاکستان کے ساتھ ہوں،تہذیب کے ساتھ ہو۔ تعلیم کے ساتھ ہو۔ اور ترقی کے ساتھ ہوں۔۔ انہوں نے کہاکہ پکا قلعہ میں مہا جر وں نے تمام قو میتوں کی میز با نی کر کیاس منفی تا ثر کو کے مہا جر پاکستان کے ساتھ نہیں ہیں اس تا ثرکو یکسر مسترد کر دیا ہے.انہوں نے کہاکہ تم نے اس ملک کو بنایا تھا.چلایا تھا.اب تمہیں ہی اپنے دوسرے بھا ئیوں کت ساتھ مل کر اس ملک کو بچاؤ گیاور غربیوں کی آواز بناؤگے ۔انہوں نے کہاکہ 2017سندھ کی عوام کے اختیارات لینے کا سال ہو گا ۔،ہم ظلم کے نظام کو ختم کر کے اختیارات کو نچلی سطح منتقل کر دیں گے.۔

22-December-2016

پاک سرزمین پارٹی کے زیر اہتمام 23 دسمبر بروز جمعہ شام چار بجے پکا قلعہ، حیدرآباد میں جلسہ عام منعقد کیا جارہا ہے

حیدرآباد( ) پاک سرزمین پارٹی کے زیر اہتمام 23 دسمبر بروز جمعہ شام چار بجے پکا قلعہ، حیدرآباد میں جلسہ عام منعقد کیا جارہا ہے، جلسے سے پاک سر زمیں پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال، صدر انیس قائم خانی اور دیگر مرکزی رہنما خطاب کر یں گے۔پکا قلعہ میں ہونے والا جلسہ تاریخی ثابت ہونے جارہا ہے،اس جلسے کی اہمیت اس طوربھی اہم ہے کہ 70 سال گزر جانے کے بعد بھی حیدرآباد کی عوام کے مسائل حل نہیں ہو پارہے ہیں ، اس مقام پر آج تک ایک سیاسی جماعت کے علاوہ کسی نے جلسہ نہیں کیا ہے، جلسے سے قبل حیدرآباد کے عوام نے سیاسی ماحول کو قبل از وقت تبدیل کردیا ہے، حیدرآباد شہر میں قومی پرچموں کی بہار نظر آرہی ہے .پکا قلعہ کے اطراف اور شہر کے مختلف مقامات پر استقبالیہ کیمپ لگائے گئے ہیں،پی ایس پی کی ہورڈنگز اور بینرز مرکزی شاہراہوں پر آویزاں کر دیئے گئے ہیں، عوام کا جوش و خروش قابل دید ہے اور 23 دسمبر پکا قلعہ جلسے سے قبل ایسا معلوم ہوتا ہے کہ ماضی کے تمام ریکاڈ ٹوٹ جائیں گے اور ایک نئے سیاسی سفر کے آغا ز کی ابتداء ہو گی۔ پکا قلعہ میں پہلی بار پاکستان کی تمام قومیتیں قومی پرچم تلے پاکستان کی بقا، سلامتی اور استحکام کے لئے متحد ہو نے جارہی ہیں جو کہ اس ملک و قوم کیلئے ایک بہتر نوید ہوگی ۔

19-December-2016

پاک سرزمین پارٹی کے تحت 23 دسمبر بروز جمعہ کوپکا قلعہ میں عظیم الشان جلسے کی تیاریاں زور شور سے جاری
انیس قائم خانی کا دیگر ذمہ داران کے ہمراہ حیدرآبا د کے مختلف علاقوں کا دورہ،تاجر برادریوں،دکانداروں،انجمنوں سے ملاقا تیں
عوام کا جوش خروش قابل دید ،سندھی اور ارود بولنے والے دونوں مل کر نفر تو ں کے بیچ کو ختم کر کے پیار اور محبت کے دیب جلائیں گے

حیدرآباد( )پاک سرزمین پارٹی کے تحت 23 دسمبر بروز جمعہ کوپکا قلعہ میں عظیم الشان جلسے کی تیاریاں زور شور سے جاری ہیں۔اس سلسلے میں پاک سرزمین پارٹی کے صدر انیس قائم خانی کے ہمراہ دیگر ذمہ داران نے حیدرآبا د کے مختلف علاقوں ماربل مارکیٹ ،باچا خان چوک،نیاپل،تلسی داس روڑ،کوہ نور چوک وغیرہ کا دورہ کیا اوروہاں پر موجودتاجر برادریوں سمیت مختلف دکانداروں انجمنوں کے سر براہان سے بھی ملاقا تیں کیں ۔اس موقع پر انہوں نے 23 دسمبر کو ہونے والے جلسے کی دعوت دی۔جس پر عوام کا جوش خروش قابل دید تھا اور کارکنان نے پارٹی کے حق میں فلگ شگاف نعرے بھی لگائے ۔پاک سر زمین پارٹی کے صدر انیس قائم خانی نے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ 23 دسمبر کو سندھی اور ارود بولنے والے دونوں مل کر نفر تو ں کے بیچ کو ختم کر کے پیار اور محبت کے دیب جلائیں گے.ا نہوں نے کہا کہ سندھ سمیت پورے پاکستا ن کے چپے چپے میں خوشحالی اوررونق کو واپس لانا چاہتے ہیں۔عوام23دسمبر کو پکا قلعہ،حیدرآباد میں کثیر تعداد میں شرکت کر ے اور مصطفی کمال کے ہاتھوں مضبوط کریں.اس موقع پر عوام نے 23 دسمبر کو ہونے والے جلسے میں شرکت کی یقین دہانی کراتے ہوئے انیس قائم خانی و دیگر رہنماؤں کو اجرک پہنائی اوران کے ساتھ سیلفیاں بھی لیں.

18-December-2016

٢٣ دسمبر تاریخی جلسہ ہوگا،عام پاکستانی کے حقوق کے حصول کے لیے باقاعدہ تحریک کا آغاز کیا جائے گا رضا ہارون سیکریٹری جنرل

 

پاک سر زمین پارٹی کے زیرِ اہتمام 23 دسمبر بروز جمعہ کو پکا قلعہ حیدرآباد میں ایک عظیم الشان جلسہ کا انقعاد کیا جارہا ہے۔

پاک سرزمین پارٹی کے رہنماؤں کے مختلف با زاروں کے دورے، عوام سے ملاقاتیں کر کے 23 دسمبر کو ہونے والے جلسے میں شرکت کی دعوت

کراچی( )پاک سر زمین پارٹی کے زیرِ اہتمام 23 دسمبر بروز جمعہ کو پکا قلعہ حیدرآباد میں ایک عظیم الشان جلسہ کا انقعاد کیا جارہا ہے. جس کی تیاریاں زور شور سے جاری ہیں اور حیدرآباد کی عوام میں 23دسمبر کو ہونے والے جلسے کے حوالے سے بڑا جوش خروش پایا جارہا ہے.اس سلسلے میں پاک سرزمین پارٹی کے مرکزی رہنماؤں کی جانب سے مختلف با زاروں کے دورے کئے گئے جہاں انہوں نے عوام سے ملاقاتیں کر کے پاک سرزمین پارٹی کے 23 دسمبر کو ہونے والے جلسے میں شرکت کی دعوت دی۔اسی طر ح مختلف انجمنیں 249طلباء کے وفود سے بھی ملاقاتیں اور کارنر میٹنگوں کا سلسلہ جاری ہے۔ملاقاتو ں اور کارنر میٹنگوں میں گفتگو کر تے ہو ئے پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون نے کہا کہ ہر پاکستانی کا دل سے احترام کرتے ہیں اسی لئے ہماری پارٹی میں تمام مذاہب، مسالک اور مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد بڑی تعداد میں شامل ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 23تاریخ کو ہونے والا جلسہ ملک کا تاریخی جلسہ ہوگا جہاں سے عام پاکستانی کے حقوق کے حصول کے لیے باقاعدہ تحریک کا آغاز کیا جائے گا۔ 2018 تک عوام کو کرپٹ حکمرانوں کے حوالے نہیں کر سکتے بلکہ حکومت اگر ہمارے حقوق نہیں دے گی تو اس کے خلاف ہر جمہوری پلیٹ فارم پر آواز بلند کریں گے ۔انہو ں نے تمام وطن پرست عوام سے اپیل کی وہ 23 دسمبر کوہو نے والے جلسہ میں زیادہ سے زیادہ تعداد میں شرکت کریں اور اپنی آنے والی نسلوں کے مستقبل کو بہتر بنانے کے لیے عملی کردار ادا کریں۔

18-December-2016

ایبٹ آباد میں مسافر وین کھائی میں گرنے کے نتیجے میں پانچ افراد کے جانبحق ہونے پر
افسوس کا اظہار۔افتخار عالم،سیکریٹری انفارمیشن، پاک سر زمین پارٹی

کراچی ( ) پاک سر زمین پارٹی کے سیکریٹری انفارمیشن افتخار عالم نے ایبٹ آباد میں مکول کے قریب مسافر وین کھائی میں گرنے کے نتیجے میں پانچ افراد کے جانبحق و زخمی ہونے پر افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک تعزیتی بیان میں انہوں نے جانحق ہونے والے افراد کے سوگوار لواحقین سے دلی تعزیت و ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے جانبحق افراد کی مغفرت ،بلند درجات اورلواحقین کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ۔انہوں نے حادثے میں زخی ہونے والوں کے لئے جلد اور مکمل صحتیابی کی دعا بھی کی ۔

 

18-December-2016

کراچی بار ایسو سی ایشن کے نو منتخب صدر نعیم قریشی کوپاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال کی جانب سے مبارکباد۔

کراچی ( ) پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے کراچی بار ایسو سی ایشن کے نو منتخب صدر نعیم قریشی کو مبارکباد پیش کی ہے۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نو منتخب اراکین ، وکلاء برادری کے فلاح و بہبود اور ان کے جائز حقوق کے حصول کے لئے اپنی تمام تر صلاحیتیں برو کار لائیں ۔

 

18-December-2016

کراچی کے علاقے ملیر میں پر اسرار بیماری پھیلنے پر تشویش کا اظہار ۔ ڈاکٹر صغیر، سینئر وائس چیئر مین پا ک سر زمین پارٹی
ر اسرار بیماری سے بچاؤ کے لئے آگائی مہم چلا ئی جائے تاکہ انسانی قیمتی جانوں کو بچایا جاسکے۔

کراچی( )پا ک سر زمین پارٹی کے سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغیر نے کراچی کے علاقے ملیر میں پر اسرار بیماری پھیلنے پر تشویش کا اظہار کیا ہے ۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ پر اسراد بیماری کی وجہ سے اب تک 1500 افراد متاثر ہوئے ہیں جس میں شیر خوار بچوں سمیت ہر عمر کے افراد شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ پر اسرار بیماری سے بچنے کیلئے حکومت کی طرف ے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ہیں جو کہ اتنہائی افسوسناک عمل ہے۔انہو ں نے کہا کہ ضلع ملیر صفائی کے ناقص انتظامات کی وجہ سے عوام وائرس کا شکار ہورہے ہیں اورسندھ حکومت کوچاہئے کہ جراثیم کے خاتمے کیلئے پورے ضلع میں ہنگامی بنیادوں پر اسپرے کروائے۔انہو ں نے کہاکہ سندھ حکومت کو چاہئے ہے کہ پر اسرار بیماری سے بچاؤ کے لئے آگائی مہم چلا ئی جائے تاکہ انسانی قیمتی جانوں کو بچایا جاسکے ۔انہوں نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ملیر میں پر اسرار بیماری سے بچنے کے لئے ٹھوس مثبت اقدامات بروئے کار لائیں اور جو لوگ پر اسراربیماری سے متاثر ہوئے ہیں انہیں علاج معالجہ کی سہو لت فراہم کی جائے۔

 

16-December-2016

پاک سر زمین پارٹی ورکرز فیڈریشن نے ڈسٹرکٹ ایسٹ کے عہدیداران کا اعلان کردیا
ملازمین کے حقوق کے حصول کی عملی جدوجہد میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے۔ سیف یار خان، ممبرنیشنل کونسل
اداروں کو معاشی طور پر مضبوط کرنا چاہتے ہیں تاکہ مزدور خوشحال ہو اورپاکستان ترقی کرے۔ توقیر احمد ، صدر ورکرز فیڈریشن پاک سر زمین پارٹی

کراچی( )ڈسٹرکٹ میونسپل کارپوریشن (ایسٹ) کے آفس گلشن اقبال زون میں وکرز فیڈریشن پاک سرزمین پارٹی کے تحت ڈی ایم سی ایسٹ میں جنرل ورکرز اجلاس کا انعقاد کیا گیا اجلاس سے نیشنل کونسل کے ممبر سیف یار خان نے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ ورکرز فیڈریشن ملازمین کے حقوق کے حصول کی عملی جدوجہد میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے۔ انہوں نے 23دسمبر حیدر آباد کاجلسہ میں عوام شرکت کرکے صدر پاک سرزمین پارٹی انیس قائم خانی اور چیئرمین سید مصطفی کمال کے ہاتھ مضبوط کریں اور وطن پرستی کے رہ میں پاکستانی ہونے کا ثبوت دیں۔ اجلاس سے توقیر احمد صدر ورکرز فیڈریشن پاک سرزمین پارٹی نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اداروں کو معاشی طور پر مضبوط کرنا چاہتے ہیں تاکہ مزدور خوشحضال ہو اورپاکستان ترقی کرے۔

 

16-December-2016

23تاریخ ہونے والا جلسہ بڑے بڑے جلسوں میں شامل ہونے جارہے ہے اب یہ لہر جو شروع ہوئے ہیں اسی اخر تک لیکر جانے ہیں، سید مصطفی کمال
طلبہ اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان کا اعلان کر کے ایک ہم سنگ میل کی بنیاد ڈال دی ہے
ہم نے پاک سر زمین پارٹی مراعات یا عہدے حاصل کرنے کے لیے نہیں بنائی بلکہ عوام کی خدمت کیلئے بنائے ہیں
پاکستان کو دنیابھر میں اورکراچی کوتعلیمی لحاظ سے 43سے دوبارہ پہلے درجے پر لیکر آئیں گے
شہداء آرمی پبلک اسکول کی یاد میں آج ہی کے دن اسٹوڈنٹ فیڈریشن کا اعلان کر رہے ہیں
پاک سرزمین پارٹی کے تحت پاکستان ہا ؤس میں شہداء کی یا دمیں شمعیں روشن کی گئی اورانہیں زبردست خراج عقیدت پیش
34رکنی اسٹوڈنٹ فیڈریشن آف پاکستان کا اعلان کر دیا گیا ہے، سرزمین پارٹی سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغیر احمد

کراچی( )پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے کہاکہ 23تاریخ کوپکا قلعہ ، حیدرآباد میں ہونے والا جلسہ ملکی تاریخ کے بڑے جلسوں میں شامل ہونے جارہا ہے اب یہ لہر جو شروع ہوئی ہے اسے آخر تک لیکر جانا ہے۔ ان اخیالات اظہار انہوں نے پاک سرزمین پارٹی کے تحت مرکزی سیکریٹریٹ میں ہونے والے اسٹونٹس فیڈ ریشن آف پاکستان کے نومنتخب عہد یداران ودیگر سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔ اس مو قع سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغر احمد ، وائس چیئر مین وسیم آفتاب ، ممبر سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی نیک محمد، ممبر نیشنل کونسل آصف حسنین، سیف یارخان اور ڈاکٹر یاسرموجود تھے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے طلبہ کی اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان کا اعلان کر کے ایک ہم سنگ میل کی بنیاد ڈال دی ہے خاص طور پرپاکستان میں نوجوانوں کی تعداد بہت ذیادہ ہے اس لئے ان کی بہترین تربیت کیلئے ہم اپنا بھر پور کردارادا کریں گے ۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے یہ جدوجہد اس لیے شروع کی کہ جن دکھی لوگوں کی آواز نہیں ہے ان کی آواز بنیں ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی تعلیم کے لحاظ سے سب سے زیادہ پڑھے لکھوں کا شہر تھا لیکن ماضی کی غلطیوں کی وجہ سے آج 43نمبر پر ہے ،لیکن ہمیں پھر کراچی کو پڑھے لکھوں کا شہر بنا نا ہے اور ساتھ ساتھ ہمیں کراچی سمیت پاکستان میں تعلیم کو عام کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے پاک سر زمین پارٹی مراعات یا عہدے حاصل کرنے کے لیے نہیں بنائی بلکہ عوام کی خدمت کیلئے بنائی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہداء آرمی پبلک اسکول کی یاد میں آج ہی کے دن اسٹوڈنٹ فیڈریشن کا اعلان کر رہے ہیں اور اسٹوڈنٹ فیڈریشن کا قیام طالبِ علموں کو تعلیم کی طرف راغب کرنا ہے ،پڑھے لکھے نوجوان سنجیدگی اختیار کریں کیونکہ انہیں قوم کو اوراس پارٹی کو لے کر چلنا ہے وہی قوم کا مستقبل ہیں،اسٹوڈنٹ فیڈریشن میں نئے لوگوں کو زیادہ تعداد میں شامل کیا گیا ہے۔ انہوں نے نو منتخب عہد ید اران کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ کارکنان صرف عوام کی خدمت کریں دیگر روایتی جماعتوں کی طرح دست و گریباں نہیں ہوں، سب سے ملیں اور انہیں گلے لگائیں ۔انہوں نے نو منتخب عہدیداران کوتلقین کی کہ انہیں پاکستان میں رہنے والے تمام پاکستانیوں سمیت استاتذہ اکرام کی عزت کرنی ہے۔انہوں نے کہاکہ آج اے پی ایس کے شہداء کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اور ان کے لواحقین کے لئے صبرِجمیل کی دعا کرتے ہیں۔ سانحہ شہداء آرمی پبلک اسکول کی یاد میں پاک سرزمین پارٹی کے تحت پاکستان ہا ؤس میں شہداء کی یا دمیں شمعیں روشن کی گئیں اورانہیں زبردست خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ اس موقع پرپاک سرزمین پارٹی سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغر احمدنے34رکنی اسٹوڈنٹ فیڈریشن آف پاکستان کا اعلان کیا ، اسٹوڈنٹ فیڈریشن آف پاکستان کے صدر انجینئر توصیفٖ اعجاز ، سینئر نائب صدرمحمد عادل خان،سمبل الحق صدیقی، نائب صدر ڈاکٹر حیا خان، عباس گوارام،کریم شاہ، سید کلیم اللہ، اور جنرل سیکریٹری منیب التوحید، دیگر ذمہ داران شامل ہے۔ انہوں نے کہاکہ نومنتخب عہد یداران اپنی اپنی ذمہ داری کو احسن طریقے انجام دینی ہو گی ۔

 

13-December-2016

اے پی ایس پشاور کے شہیدوں کو ان کی برسی کے موقع پر خراج عقیدت پیش کرتے ہیں،مصطفی کمال
شہید بچوں کی قربانیاں کسی صورت میں رائیگاں نہیں جانے دیں گے۔پاک سر زمین پارٹی

کراچی ( ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے اے پی ایس پشاور کے شہداء کے برسی کے موقع پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ مجھ سمیت پوری پاک سرزمین پارٹی معصوم شہداء کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کرتی ہے، نہوں نے کہا ہے کہ آرمی پبلک اسکول پشاور کے طلباء نے پاکستان کی بقا و سلامتی کی خاطر اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے دنیا بھر میں یہ پیغام دیا کہ پاکستان کے عوام اپنے وطن کی سا لمیت کی خاطر اپنی جانوں کا نظرانہ پیش کرنے سے بھی گریز نہیں کرتے، انہوں نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی اس ملک کی سا لمیت پر کسی بھی قسم کا سمجھوتہ نہیں کرے گی، اے پی ایس پشاور کے شہیدوں کو ان کی برسی کے موقع پر خراج عقیدت پیش کرتے ہیں، ان بچوں کی قربانیاں کسی صورت میں رائیگاں نہیں جانے دیں گے.۔

 

13-December-2016

میرپورخاص کے لوگوں نے شاندار اور والہانہ استقبال کر کے ہمیں کامیابی سے ہمکنار کر دیا ، چیئرمین پی ایس پی
عوام نے اپنی اور آنے والی نسلوں کی قربانی دی لیکن کیاملا،جن کمروں میں بیٹھتے تھے وہاں عوام کی فلاح و بہبود کی کوئی بات نہیں ہوتی تھی، سید مصطفی کمال
قائداعظم گیٹ پر پرچم کشائی ، مہاجر کالونی چوک اور بعد ازاں سیٹلائیٹ ٹاؤن میں آفس کا افتتاح
جن لوگوں نے پتھر مارے آج ہمارے قافلے کا حصہ ہیں کارکنان کو ہمت، حوصلے اور صبر پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں،سید مصطفی کمال
نادان لوگوں نے جوسلوک کیا انہیں معاف کر دیا تھا اور آج انہی لوگوں نے ہمارا پرجوش اور تاریخی استقبال کیا، صدرا نیس قائم خانی
ہم محبتیں بانٹنے کیلئے آئے ہیں اس لیے کارکنان نفرتیں ختم کر کے محبتیں بانٹیں،کراچی سے کشمور تک عوام کے مسائل کا حل چاہتے ہیں، انیس قائم خانی
میر پور خاص میں پاک سر زمین پارٹی کے امتحانوں کا آغاز ہوا تھا اور آج صرف 8 ماہ کی جدوجہد کے بعد عوام نے بھرپور محبت دی، سیکریٹری جنرل پی ایس پی

میرپورخاص ( )پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال، صدرانیس قائم خانی، سیکریٹری جنرل رضاہارون،سینئر وائس چیئر مین انیس احمد ایڈوکیٹ اوروائس چیئرمین اشفاق منگی1 روزہ دورے پرمیرپور خاص پہنچے تو میرپورخاص میں عوام کے سمندر نے رہنماؤں کاپرجوش استقبال کیا اور پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں، پی ایس پی کے چیئرمین سید مصطفی کمال، صدر انیس قائم خانی اور دیگر مرکزی رہنمانے قائداعظم گیٹ پر پرچم کشائی، مہاجر کالونی چوک اور بعد ازاں سیٹلائیٹ ٹاؤن میں آفس کا افتتاح کیا، اس موقع پر عوامی سمندرسے خطاب کرتے ہوئے پارٹی چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہاآج کا والہانہ استقبال اللہ کی تائید اور نصرت کی کھلی گواہی ہے میرپورخاص کے لوگوں نے شاندار اور والہانہ استقبال کر کے ہمیں کامیابی سے ہمکنار کر دیا قدرت کا قانون ہے کہ اگر ظلم حد سے بڑھ جائے تو ظالموں کی جگہ نئے لوگ آجاتے ہیں،30 سالوں میں عوام نے اپنی اور آنے والی نسلوں کی قربانی دی لیکن عوام کو کیا ملا،جن کمروں میں بیٹھتے تھے وہاں عوام کی فلاح و بہبود کی کوئی بات نہیں ہوتی تھی ظلم و زیادتی کی انتہاہ دیکھ کر سابقہ پارٹی سے علیحدہ ہوئے، سید مصطفی کمال نے کہا کہ ہم نے تمام عہدوں اور آسائشوں کو عوام کی خاطر ٹھکرایا  اور عوام کی خاطر ہی ہم واپس آئے ہیں، ہم نے وقت کے فرعونوں کو للکارا اور اپنی زندگیاں داؤ پر لگائیں کے آنے والی نسل کو تحفظ دینے کی کوشش کی،ہم نے سچ کہہ دیا اس لیے ہم کامیاب ہیں ماننا نہ ماننا عوام کا کام ہے ہم سے نہ ماننے والوں کا سوال نہیں ہوگا،انہوں نے کہا کہ آج کا منظر محبتیں بانٹنے کی نتیجہ ہے جن لوگوں نے پتھر مارے آج ہمارے قافلے کا حصہ ہیں کارکنان کو ہمت، حوصلے اور صبر پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں کارکنان کھلے دل سے سب کو معاف کریں اور عاجزی اختیار کریں سیاسی مخالفین کو گلے لگائیں، پاک سرزمین پارٹی کے رہنماؤں نے اقتدار اور طاقت کی قربانی دی ہے، وہ لوگ جو ہمیں قوم کے باپ کا غدار کہتے ہیں اسی باپ کے کہنے پر استفی دینے کے لیے تیار نہیں ہیں ہم اس ملک کے لوگوں کی آپس کی نفرت، فرقہ واریت اور نسل پرستی کو ختم کردیں گے، 23 دسمبر کو عوام حیدرآباد پکا قلعہ جلسے میں شرکت کریں اور دیگرلوگوں کو بھی اپنے ہمراہ وطن پرستی کی جدوجہد میں شامل ہونے کی دعوت دیں،اس موقع پر پارٹی صدر انیس قائم خانی نے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن ہر لحاظ سے تاریخی دن ہے،ہمارے ساتھ چند نادان لوگوں نے جوسلوک کیا اسی وقت انہیں معاف کر دیا تھا اور آج انہی لوگوں نے ہمارا پرجوش اور تاریخی استقبال کر کے ثابت کردیا کہ گمراہی کے بت ٹوٹ چکے ہیں،ہم محبتیں بانٹنے کیلئے آئے ہیں اس لیے کارکنان نفرتیں ختم کر کے محبتیں بانٹیں،کراچی سے کشمور تک عوام کے مسائل کا حل چاہتے ہیں،انہو ں نے کہا کہ عوام کے حقوق کے لیے 2018 تک نہیں رکیں گے اور اپنے عوام کے ساتھ مل کر ان کے حقوق کے حصول کیلئے جدوجہد کریں گے،سیکریٹری جنرل پی ایس پی رضا ہارون نے کہا کہ میر پور خاص میں پاک سر زمین پارٹی کے امتحانوں کا آغاز ہوا تھا اور آج صرف 8 ماہ کی جدوجہد کے بعد عوام نے بھرپور محبت دی اور محبت کے پیغام کو آگے پہنچایا اس پر ان کے شکر گزار ہیں، قبل ازیں سید مصطفی کمال نے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سے  مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ میر پور خاص سے کراچی جانے والی ٹرین کو عوامی مفاد میں بحال کریں۔

13-December-2016

میرپورخاص( )پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ وہ حیدرآباد میں پی ایس پی کے زیر اہتمام ہونے والے جلسے میں شرکت کریں اور ہمارے جدوجہد میں ہمارے ساتھ قدم سے قدم ملائیں اور پاک سرزمین پارٹی کی مالی امداد بھی کریں ، انہوں نے اپنے بیان میں پاکستان بھر کے وطن پرست عوام سے اپیل کی ہے کہ پی ایس پی کے ساتھ اپنی ذاتی حیثیت میں فنڈز ہمارے پارٹی کے اکاؤنٹ ایچ بی ایل نرسری برانچ ، کوڈ نمبر 0027 اکاؤنٹ نمبر 002777901235603 اور بیرون ممالک سے آئی بی اے این نمبر PK08HABB000027701235603 میں جمع کراویں ۔

 

13-December-2016

نوجوانوں کوآرگنائز نہیں کیاگیا تو یہ کسی بھی ملک دشمن قوت کا آلہ کار بن جائیں گے، سید مصطفی کمال
حیدرآباد جیسا خوبصورت شہر ایک دن میں نہیں اجڑابلکہ اسے منصوبہ بندی کے تحت برباد کیا گیا ہے
پاکستان میں1 کروڑ سے زائد بچے جسمانی اور ذہنی کمزوری کا شکار ہیں ان کے علاج معالجے کیلئے اسپتال اور تعلیم حاصل کرنے کیلئے اسکول میسر نہیں ہیں
ہمیں اسکول، ہسپتال، پانی، بجلی، پارکس اور سڑکوں کے ساتھ ساتھ وسائل و اختیارات گلی محلے میں عام آدمی کی دسترس میں چاہیے، یوتھ کنونشن سے خطاب

حیدرآباد ( ) چیئرمین پاک سر زمین پارٹی سید مصطفی کمال نے کہا ہے پاکستان میں نوجوانوں کی بڑی تعداد موجود ہے اگر انہیں آرگنائز نہیں کیاگیا تو یہ کسی بھی ملک دشمن قوت کا آلہ کار بن جائیں گے اور ملک کا قیمتی اثاثہ بننے کے بجائے اس کیلئے خطرے کابا عث بنیں گے ، اس وقت پاکستان میں1 کروڑ سے زائد بچے جسمانی اور ذہنی کمزوری کا شکار ہیں ان کے علاج معالجے کیلئے اسپتال اور تعلیم حاصل کرنے کیلئے اسکول میسر نہیں ہیں ، پاکستان غذائی اعتبار سے ایک خود کفیل ملک ہے لیکن اس ملک میں پیدا ہونے والے بیشتر بچے غذائی قلت کی وجہ سے پیدا ہوتے ہی مر جاتے ہیں یا ذہمی و جسمانی بیماریوں میں مبتلا رہتے ہیں 3.5لاکھ بچے 7 سال کی عمر کو نہیں پہنچ پاتے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے حیدرآباد میں پی ایس پی کے زیر اہتمام یوتھ کنویشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر پارٹی صدر انیس قائم خانی ، وائس چیئرمین اشفاق منگی ، سیکریٹری انفارمیشن اور دیگر رہنما موجوتھے ،انہوں نے کہا کہ حیدرآباد جیسا خوبصورت شہر ایک دن میں نہیں اجڑابلکہ اسے منصوبہ بندی کے تحت برباد کیا گیا ہے ،ماضی میں جن شہروں کی مثالیں دی جاتی تھیں اور وہ پاکستان کی ترقی میں و خوشحالی کی ضمانت سمجھے جاتے تھے انہیں نام نہاد وطن فروشوں نے تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کیا ہے،ہمارے پاس ہتھیار نہیں ہیں اور نہ ہی ہم زبردستی لوگوں کو اپنی جانب بلا رہے ہیں ،پی ایس پی وقت کے فرعون کے خاتمے کے لئے نہیں بلکہ آئندہ آنے والی نسلوں کے کامیاب اور روشن مستقبل کیلئے جدوجہد کر رہی ہے، ،سید مصطفی کمال نے کہا کہ کئی نسلیں اس ملک میں مفاد پرستوں کی جنگ میں کٹ گئیں اور ایک نسل تیار کھڑی ہے ہمیں اس نسل کو بہتر مستقبل کا خواب دکھانا ہے اور اس کو شرمندہ تعبیر کرنے کے مواقع اسی ملک میں پیدا کرنے ہیں تاکہ یہ نسل غیر ممالک جانے کے بجائے اپنے ملک میں رہ کر اپنی صلاحیتین اس کی تعمیر و ترقی میں صرف کریں ، انہوں نے کہاکہ ہمیں اس وقت سے ڈرنا چاہیے جب یہ نسل اپنا پیٹ بھرنے کیلئے روٹی چھینے گی ،اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے مرکزی و صوبائی حکومتیں کوئی قابل تعریف قدم نہیں اٹھا رہی ہیں ،پی ایس پی اس ملک کے نوجوانوں کو ایک نئی سوچ دے رہی ہے اور ہم بنیادی انسانی حقوق کا سوال کر رہے ہیں جسے فراہم کرنا حکومت کی آئینی ، قانونی اور اخلاقی ذمہ داری ہے ، انہوں نے کہا کہ ہمیں اسکول، ہسپتال، پانی، بجلی، پارکس اور سڑکوں کے ساتھ ساتھ وسائل و اختیارات گلی محلے میں عام آدمی کی دسترس میں چاہیے ،ہر پاکستانی کو حق و سچ کہنا پڑے گا ورنہ آنے والی نسلیں انہیں معاف نہیں کریں گی،تمام وطن پرست 23 دسمبر پکا قلعہ جلسہ میں شرکت کر کے اسے کامیاب بنائیں ، انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں ہونے والے جلسہ تاریخ رقم کرے گا اور پی ایس پی عوام آئندہ کا لائحہ عمل بھی طے کرے گی ۔ بعد ازاں سیکریٹری انفارمیشن پی ایس پی افتخار عالم نے نومنتخب یوتھ ممبران کے ناموں کا اعلان بھی کیا۔

7-December-2016

پی آئی اے کی پرواز کے حادثے کے نتیجے میں شہید ہونے والے تمام مسافر بشمول معروف مبلغ و نعت خواں
جنید جمشید اور ان کی اہلیہ ،جہاز کے عملے کے تمام افراد کی شہادت پر انتہائی دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

کراچی ( ) پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے پی آئی اے کی پرواز کے حادثے کے نتیجے میں جانبحق ہونے والے تمام مسا فر بشمول معروف مبلغ و نعت خواں جنید جمشید اور ان کی اہلیہ ،جہاز کے عملے کے تمام افراد کی شہادت پر انتہائی دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ۔ مصطفی کمال نے اس حادثے کے نتیجے میں شہید ہونے والے تمام افراد کے لئے دعا کی کہ اللہ تعالی ان تمام افراد کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے اور ان کے تمام لواحقین کو مشکل کی گھڑی میں صبرِ جمیل عطا فرمائے ۔ (آمین)

6-December-2016

پاک سر زمین پارٹی 7دسمبر 2016 کو واٹر بورڈ، کے ایم سی اور سیسی کی ڈپارٹمنٹ ورکرز فیڈریشن کا اعلان کریگی۔ سیف یار خان
ادارے مضبوط ہونگے توپاکستان مستحکم ہوگااور مزدور خوشحال ہونگے۔ممبر نیشنل پاک سر زمین پارٹی

کراچی ( )ممبر نیشنل کونسل سیف یار خان نے اپنے بیان میں کہا کہ ملک بھر میں عوام اس وقت اپنے بنیادی انسانی حقوق سے محروم ہیں ،اس وقت ملک میں پانی ، بجلی ،گیس ، تعلیم صحت جیسی بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ،پاک سر زمین پارٹی عوام کے مسائل کے حل کے لئے ملک بھر میں اداروں اور مزدوروں کو مضبوط و مستحکم کرنا چاہتی ہے اور ان کے مسائل کے حل کیلئے ورکرز فیڈریشن کی شکل میں باقائدہ جدوجہد کا آغاز کر چکی ہے، کیونکہ پاک سر زمین پارٹی کا ماننا ہے کہ ادارے مضبوط ہونگے توپاکستان مستحکم ہوگااور مزدور خوشحال ہونگے۔پاک سر زمین پارٹی 7دسمبر 2016 کو واٹر بورڈ، کے ایم سی اور سیسی کی ڈپارٹمنٹ ورکرز فیڈریشن کا اعلان کریگی

6-December-2016

پاک سر زمین پارٹی 7دسمبر 2016 کو واٹر بورڈ، کے ایم سی اور سیسی کی ڈپارٹمنٹ ورکرز فیڈریشن کا اعلان کریگی۔ سیف یار خان
ادارے مضبوط ہونگے توپاکستان مستحکم ہوگااور مزدور خوشحال ہونگے۔ممبر نیشنل پاک سر زمین پارٹی

کراچی ( )ممبر نیشنل کونسل سیف یار خان نے اپنے بیان میں کہا کہ ملک بھر میں عوام اس وقت اپنے بنیادی انسانی حقوق سے محروم ہیں ،اس وقت ملک میں پانی ، بجلی ،گیس ، تعلیم صحت جیسی بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ،پاک سر زمین پارٹی عوام کے مسائل کے حل کے لئے ملک بھر میں اداروں اور مزدوروں کو مضبوط و مستحکم کرنا چاہتی ہے اور ان کے مسائل کے حل کیلئے ورکرز فیڈریشن کی شکل میں باقائدہ جدوجہد کا آغاز کر چکی ہے، کیونکہ پاک سر زمین پارٹی کا ماننا ہے کہ ادارے مضبوط ہونگے توپاکستان مستحکم ہوگااور مزدور خوشحال ہونگے۔پاک سر زمین پارٹی 7دسمبر 2016 کو واٹر بورڈ، کے ایم سی اور سیسی کی ڈپارٹمنٹ ورکرز فیڈریشن کا اعلان کریگی

3-December-2016

سید مصطفی کمال دو روزہ دورے پر پنجاب پہنچ گئے ، پارٹی کارکنان ،ذمہ داران اور عوام کا بھرپور استقبال ۔
تمام قسم کے مذہبی ، لسانی،تنظیمی تفرقات کو مٹا کر سب کو ایک جھنڈے تلے جمع کرنے آئے ہیں ،سید مصطفی کمال
پنجاب کی عوام نے شاندار استقبال کر کے ثابت کردیا کہ پاکستان کی بقاء و سلامتی کے لئے تمام پاکستانی متحد ہیں،چیئر مین پاک سر زمین پارٹی
پاکستان کی مٹی ہمیں سب سے ذیادہ عزیز ہے ، اس کی توقیر کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے سے بھی گریز نہیں کریں گے ۔
سید مصطفی کما ل پر لاہور ایئر پورٹ کے باہر پھولوں کی پتیاں نچھاور،عوام کے پاکستان زندہ باد !! کے فلگ شگاف نعرے

کراچی( )چیئر مین پاک سر زمین پارٹی سید مصطفی کمال دو روزہ دورے پر پنجاب پہنچ گئے جہاں پاک سر زمین پارٹی کے کارکنان ،ذمہ داران اور عوام نے ان کا بھرپور استقبال کیا ، لاہور ایئر پورٹ کے باہر ان پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں ،عوام کی جانب سے پاکستان زندہ باد !! کے فلگ شگاف نعرے لگائے گئے ،ہر طرف پاکستانی پرچموں کی بہار تھی، اس موقع پر سید مصطفی کمال کا کہنا تھا کہ ہم تمام قسم کے مذہبی ، لسانی،تنظیمی تفرقات کو مٹا کر سب کو ایک جھنڈے تلے جمع کرنے آئے ہیں ،جہاں تمام پاکستانیوں کو ان کے بنیادی حقوق حاصل ہوں ،عوام کا آپس میں عزت و احترام کا رشتہ ہواور ایک دوسرے کے دکھ درد میں سب ایک دوسر ے کا ساتھ دیں، آج پنجاب کی عوام نے مصطفی کمال اور پاک سر زمین پارٹی کے رہنماؤں کا استقبال کر کے ثابت کردیا کہ پاکستان کی بقاء و سلامتی کے لئے تمام پاکستانی متحد ہیں،پاکستان کی مٹی ہمیں سب سے زیادہ عزیز ہے اور اس کی توقیر کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے سے بھی گریز نہیں کریں گے ، آج ثابت ہو گیا کہ ملک دشمن عناصر کے خلاف پنجاب کی عوام بھرپور طریقے سے ہمارے ساتھ ہے بلکہ سیسیہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح ہمارے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ حکمران اب اپنا قبلہ درست کریں ملک میں نفرتوں اور تعصب پر اب سیاست نہیں کرنے دیں گے بلکہ عوام کے مسائل ہر حال میں حل کرنے ہونگے ۔بعد اذاں لاہور میں بھرپور استقبال پر انہوں نے تمام وطن پرستوں اور پنجاب کی عوام کا شکریہ ادا کیا۔

2-December-2016

پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی دفتر میں سندھی کلچر ڈے کا انعقاد، سندھ کی ثقافت سے لوگوں کو روشناس کروایا گیا۔
ہمیں سندھی، بلوچی، پنجابی، پٹھان ہونے پر فخر ہونا چاہیے لیکن اس بنیاد پر نفرت اور دشمنی نہیں ہونی چاہئے۔ انیس قائم خانی
اجرک اور سندھی ٹوپی پہننااور تحفے باٹنا سندھ کی قدیم روایت ہے اور یہ ثقافتی عید کی مانند ہے۔صدر پاک سر زمین پارٹی

کراچی( ) پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاؤس میں سندھی کلچر ڈے کا انعقاد کیا گیا جس میں سندھ کی ثقافت سے جوش و جذبے کے ساتھ لوگوں کو روشناس کروایا گیا ۔اس موقع پرپارٹی کے صدر انیس قائم خانی نے کہا کہ1947میں پاکستان بنانے والوں نے اس نظریے کے تحت اس ملک کی بنیاد رکھی تھی کہ یہاں تمام زبانیں بولنے والے تمام مذاہب کے ماننے والوں کے حقوق صرف پاکستانی ہونے کی بنیاد پر یکساں دیئے جائیں گے ، تمام لوگ محبت بھائی چارے کے ساتھ رہیں گے، 70 سالوں میں ہمیں ایک دوسرے پر فخر ہونا چاہیے تھا لیکن بے بنیاداور گمراہ کن پروپگنڈوں سے نفرتیں پیدا کی گئیں،لیکن جب ہم 3مارچ کو آئے تو ہم نے یہی پیغام پوری پاکستانی قوم کو دیا کہ ہمیں سندھی، بلوچی، پنجابی، پٹھان ہونے پر فخر ہونا چاہیے لیکن اس بنیاد پر نفرت اور دشمنی نہیں ہونی چاہئے، پورے ہندوستان میں سندھ واحد صوبہ تھا جس نے سب سے پہلے پاکستان کی قرارداد اسمبلی سے منظور کروائی۔ اجرک اور سندھی ٹوپی پہننااور تحفے باٹنا سندھ کی قدیم روایت ہے اور یہ ثقافتی عید کی مانند ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم سندھ کو جوڑیں گے، اردو بولنے والے سندھی اور سندھی بولنے والے سندھی آپس میں بھائی بھائی ہیں ،مصطفی کمال اور انیس قائم خانی سندھ دھرتی کے بیٹے ہیں،ہماری پارٹی کا مقصد سب کو ایک کرنا اور جوڑنا ہے،محبت اور بھائی چارے کے رشتے کو فروغ دینا ہے،سندھ کے شہروں اور دیہی علاقوں میں فرق ختم کر نا ہے،یہ روایتی حکمرانوں کی سیاست کا نتیجہ ہے،ہم سندھ کی ترقی کے لئے عام باشعور عوام کو پاک سر زمین پارٹی کے شانہ بشانہ کام کرنے کی دعوت دیتے ہیں،سندھ میں بنیادی سہولیات کے حصول کے لیے سب کو ایک ہونا ہوگا،سندھ کی عوام کو پانی، بجلی، تعلیم، صحت کی بنیادی سہولیات نہیں،70 سالوں میں پیپلزپارٹی نے ایک ماڈل ڈسٹرکٹ یا گاؤں نہیں بنایا،بچے ماؤں کی گودوں میں دوائیں نہ ملنے کے باعث مر رہے ہیں،سیلاب آتا ہے تو ہماری مائیں اور بہنیں کھلے آسمان کے نیچے بے یارو مددگار بیٹھی ہوتی ہیں،2018 کے الیکشن میں سندھی ایسی جماعت کو ووٹ دیں جو سندھ کو جوڑے، سیاست نہ کرے، سندھ کی عوام کو تب تک لاوارث نہیں چھوڑیں گے اس لئے23 دسمبر کو حیدرآباد میں عوامی عدالت کا انعقاد کیا جائے گا جس میں سندھ کی عوام بھرپور شرکت کر کے حکمرانوں کو پیغام دیں کہ اب نفرتیں بانٹ کر حکومت نہیں کر سکیں گے بلکہ عوام کو ان کے حقوق ترجیحی بنیادوں پر دینے ہونگے ۔اس موقع پر سینئر وائس چیئر مین ڈاکٹر صغیر ، انیس ایڈوکیٹ، وائس چیئر مین وسیم آفتاب اور اشفاق منگی بھی موجود تھے۔

2-December-2016

سالانہ 350000بچے پانچ سال کی عمر تک پہنچنے سے پہلے مر جاتے ہیں۔افتخار عالم
پاکستان میں ایک پو ری نسل غیر تواناافراد پر مشتمل ہے جس میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے ۔سیکریٹری انفارمیشن پاک سر زمین پارٹی
کرپشن کا نظام لاکھوں معصوم بچوں کی زندگیاں نگل رہا ہے ۔

کراچی( )سیکریٹری انفارمیشن پاک سر زمین پارٹی افتخار عالم نے اپنے بیان میں کہا کہ پاکستان میں بڑھتی ہوئی بچوں کی شرح اموات انتہائی تشویشناک ہے، ملک بھر میں سالانہ 350000بچے پانچ سال کی عمر تک پہنچنے سے پہلے مر جاتے ہیں اور بقیہ ماند ہ ذہنی اور جسمانی کمزوری کا شکار ہو رہے ہیں ، جسکی وجہ غذائی قلت ، پینے کے صاف پانی کا بحران اور معیاری ادویات کا نہ ہونا ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں ایک پو ری نسل غیر تواناافراد پر مشتمل ہے جس میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے،ہم پاکستان کے مستقبل کولے کر پریشان ہیں کہ آئندہ آنے والی دیہائیوں میں پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ یہی ہوگا ،حکومتِ وقت اسے بر وقت حل کرنے کے لئے اقدامات کرے کیونکہ ان ہلاکتوں کی ذمہ دار بلواسطہ یا بلا واسطہ حکومت ہے جس کی تر جیحات میں یہ مسئلہ ہی نہیں ،ہماری نظر میں اس مسئلہ کی بنیادی وجہ ملک میں موجود کرپٹ نظام ہے جس کی وجہ سے یہ تمام مسائل جنم لے رہے ہیں، یہ کرپشن کا نظام لاکھوں معصوم بچوں کی زندگیاں نگل رہا ہے ۔