NEWS

کراچی ، جون 30 2017

کراچی میں بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر موثر اقدامات نہ کیے جانے پر ترجمان پی ایس پی کااظہار تشویش

شہر کی مرکزی شاہراہوں، اور نشیبی علاقوں میں بارش کا پانی کھڑا ہو گیا، متعلقہ حکام اور عملہ غائب ہے  ترجمان پاک سرزمین پارٹی

مختلف حادثات میں متعدد افراد کے جاں بحق و زخمی ہونے پر دکھ اور افسوس کا اظہار

کراچی (         ) پاک سر زمین پارٹی کے ترجمان نے کراچی میں بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے لئے قبل از وقت موثر اقدامات نہ کیے جانے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے شہری و صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر قائد میں حالیہ بارش کے نتیجے میں پانی کی نکاسی اور کچرے کی صفائی ہنگامی بنیادوں پر کرائی جائے، اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ گٹروں، برساتی نالوں اور کچرے کی صفائی کیلئے کوئی پیشگی انتظامات ہی نہیں کیے گئے تھے جبکہ بارشوں کی پیشن گوئی محکمہ موسمیات کی جانب سے کردی گئی تھی، انہوں نے کہا کہ شہری حکومت کے عوامی خدمت کے بلند و بانگ دعوں جھوٹے ثابت ہو چکے، کراچی میں موسلا دھار بارش کے ساتھ ہی شہر کی سڑکیں ندی و تالاب کر منظر پیش کررہی ہیں، نشیبی علاقوں میں پانی کھڑا ہونے کی وجہ سے گھروں میں داخل ہوگیا ہے جس کہ وجہ سے غریب عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو گیا ہے، انہوں نے کہا کہ عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے نالوں کی صفائی کے لیے مختص کڑوڑوں کا فنڈ ہڑپ کر لیا گیا اور عوام کو لاوارث چھوڑ دیا گیا ہے ، انہوں نے کہا کہ نہ عید سے قبل شہر سے کچرا صاف کیا گیا اور نہ ہی برساتی نالوں اور گٹروں کی صفائی کی گئی  جس کی وجہ سے کچرے سے تعفن اٹھ رہا ہے جو کہ بیماریاں پھیلنے کا سبب ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلٰی سندھ اور میئر کراچی سمیت افسران اس تمام صورتحال پر شہریوں کے مسائل کے حل کیلئے موجود نہیں ہیں ۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طور پر شہر میں ہنگامی بنیادوں پر پانی کی نکاسی اور کچرے کی صفائی کے انتظامات کو یقینی بنائیں تاکہ مزید بارشوں کی صورت میں شہر کو مزید تباہی اور بربادی سے بچایا جاسکے، انہوں نے کراچی میں مختلف حادثات میں متعدد افراد کے جاں بحق و زخمی ہونے پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے دلی تعزیت کا اظہار کیا۔
 
_____________________

                       ⁠⁠جمشید دستی پردورانِ حراست تشدد کرنے پر پی ایس پی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون کا اظہار مذمت

جمشید دستی پر دورانِ حراست تشدد غیر اخلاقی، غیر انسانی اور غیر قانونی عمل ہے، رضاہارون

پاک سر زمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون نے جمشید دستی پردورانِ حراست تشدد کرنے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ جمشید دستی پر دورانِ حراست تشدد غیر اخلاقی، غیر انسانی اور غیر قانونی عمل ہے اورآئین اور قانون کے تحت اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کو اس واقعہ کا فوری نوٹس لینا چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ بحثیت اسپیکر ایاز صادق فوری جمشید دستی کے پروڈکشن آرڈر جاری کریں اور انہیں انصاف دلائیں اور چیف جسٹس اس واقع کا نوٹس لیں اور ممبر نیشنل اسمبلی جمشید دستی کو انصاف دلائیں۔

کراچی ، جون 28 2017

پاک سرزمین پارٹی کے وفد کی نمائش چورنگی پر پارا چنار کے شہدا کے لیئے دیئے گئے علامتی دھرنے میں شرکت
سانحہ پارا چنار پہ حکومت نے جس بے حسی کا مظاہرہ کیا وہ قابلِ مذمت ہے۔ رضا ہارون
حکومتِ وقت پارا چنار کے باسیوں کے تحفظ کو ہر حال میں یقینی بنائے۔ ڈاکٹر صغیر
پارا چنار واقع کے شہدا اور زخمیوں کے امدادی اعلان پر فوری عملدرآمد کیا جائے۔ وسیم آفتاب

کراچی (۔ ) پاک سرزمین پارٹی کے نمائندہ وفد کی نمائش چورنگی پر پارا چنار کے شہدا کے لیئے دیئے گئے ایم ڈبلیو ایم کے علامتی دھرنے میں شرکت اور علامہ مرزا یوسف، علامہ علی جعفری، علامہ اظہر سلطان نقوی اور ایم ڈبلیو ایم کے دیگر صوبائی رہنماؤں سے ملاقات، پی ایس پی کے وفد میں سیکرٹری جنرل رضا ہارون سینئیر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر، وسیم آفتاب،قمر عباس نقوی، ذیشان احمد اور دیگر رہنما شامل تھے، اس موقع پر مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے کہا کہ پارا چنار سانحہ پر حکومت نے جس بے حسی کا مظاہرہ کیا وہ قابل مذمت

 

کراچی ، جون 28 2017

پی ایس پی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاؤس میں عید سادگی سے منائی گئی

صدر پی ایس پی انیس قائم خانی اور دیگر رہنماؤں نے پارٹی ذمہ داران، کارکنان و عوام سے عید ملی

کراچی (       ) پاک سرزمین پارٹی کے مرکزی سیکرٹیریٹ پاکستان ہاؤس میں عید  سادگی سے منائی گئی، عید کے دوسرے روز پاکستان ہاؤس میں صدر انیس قائم خانی، سیکریٹری جنرل رضاہارون، سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر، انیس ایڈووکیٹ اور دیگر رہنماؤں نے پارٹی ذمہ داران، کارکنان و عوام سے عید ملی، اس موقع پر سانحہ بہاولپور میں جاں بحق اور کوئٹہ، کراچی  پارا چنار دہشت گردی میں شہید ہونے والوں کے  بلندی دراجات اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کیلئے اجتماعی دعا کی گئی

 

کراچی ، جون 27 2017

پاکستان سمیت دنیا بھر کے مسلمانوں کو مصطفی کمال کی جانب سے عید الفطر کی دلی مبارکباد
حالیہ دہشت گردی کے واقعات اور بھاولپور سانحہ میں شہید اور جاں بحق ہونے والے معصوم پاکستانی شہریوں کیافسوسناک واقعات کی وجہ سے عید سادگی سے منائی جائے … مصطفی کمال

پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے پاکستان سمیت دنیا بھر کے مسلمانوں کو عید الفطر کی دلی مبارکباد پیش کی ہے۔ اپنے خصوصی پیغام میں انہوں نے ملک میں پیش آنے والے حالیہ دہشت گردی کے واقعات میں شہید اور بھاولپور سانحہ میں جاں بحق ہونے والے معصوم پاکستانی شہریوں کے اہل خانہ کے دکھ اور غم میں شریک ہونیاور عید سادگی سے منانے کی اپیل کی۔ انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ اس عیدالفطرکوپاکستان کیلئے باعث رحمت وبرکت بنائے، خطرات اورمشکلات سے نکالے اورملک وقوم کوترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن کرے۔

بھاولپور کے قریب آئل ٹینکرالٹنے سے آگ بھڑک اٹھنے اور اس کے نتیجے میں سو سے زائد افراد کے جھلس کر جاں بحق ہو جانے پررضاہارون کااظہار افسوس
انتظامیہ کی غیر ذمہ داری اور غفلت کے باعث عوام کو آئل ٹینکر سے دور نہیں رکھا گیا اور ممکنہ احتیاطی تدابیر اختیار نہیں کی گئیں

کراچی () پاک سر زمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون نے احمد پورشرقیہ بھاولپور کے قریب آئل ٹینکرالٹنے سے آگ بھڑک اٹھنے اور اس کے نتیجے میں سو سے زائد افراد کے جھلس کر جاں بحق ہو جانے پر شدید دکھ اور افسوس کا اظہارکیا ہے ۔ اپنے ایک تعزیتی بیان میں انہوں نے کہاکہعید سے ایک روز قبل المناک سانحہ ہے جس سے بچا جاسکتا تھا لیکن انتظامیہ کی غیر ذمہ داری اور غفلت کے باعث عوام کو آئل ٹینکر سے دور نہیں رکھا گیا اور ممکنہ احتیاطی تدابیر اختیار نہیں کی گئیں.انہوں نے جاں بحق ہونے والے شہریوں کے لواحقین سے دلی افسوس و ہمدردی اظہار کرتے ہوئے انہیں صبر کی تلقین کی اور زخمی ہونیوالے افرادکے لئے جلد صحتیابی کے لئے دعا کی۔

——————

چیئر مین مصطفی کمال اورصدر انیس قائم خانی کا حیدرآباد کے تعلقہ ممبر مصطفی گدی کے انتقال پر افسوس کا اظہار

کراچی ( ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی کی جانب سے حیدرآباد کے تعلقہ ممبر مصطفی گدی کیانتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار، پاکستان ہاؤس سے جاری اپنے تعزیتی بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ مصطفی گدی نے پاک سرزمین پارٹی کیلئے گراں قدر خدمات انجام دیں اور 3مارچ سے ہی پارٹی بنانے کے اعلان کے بعد پارٹی کا حصہ بنے ،پارٹی کی ابتداء سے ہی پی ایس پی کے پیغام کو عام عوام تک پہنچایا، پاک سرزمین پارٹی ان کی خدمات کا اعتراف کرتی ہے اور دکھ کی اس گھڑی میں مرحوم کے اہل خانہ سے دلی تعزیت وہمددری کا اظہار کرتی ہے، انہوں نے مرحوم کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی اور درجات کی بلندی سوگواران کیلئے صبر جمیل کی دعا کی.

کراچی ، جون 23 2017

مئیر کراچی کا  سیاسی جماعتوں میں نوکریاں تقسیم کرنا میرٹ کا قتل ہے

مئیرکراچی کمیشن لیکر جس طرح کراچی کی خدمت کر رہے ہیں کراچی کا شہری اس سے واقف یے

کراچی میں بڑھتے ہوئے جرائم کی اصل وجہ نوجوانوں کے میرٹ کااستحصال ہے

مئیرکراچی اپنی ناکامی اور شہر کی تباہی کو سیاسی رشوت دیکر سیاسی جماعتوں  کو خریدنا چایتے ہیں

معزز عدلیہ کو مئیر کراچی کے بغیر میرٹ سیاسی جماعتوں میں نوکریاں تقسیم کرنے کے بیان کا ازخود نوٹس لینا چاہیے

پڑھے لکھے و باصلاحیت نوجوانوں کی حق تلفی کرکے اقرباپروی کا مظاہر کیا جاری ہے

کراچی میں بڑھتی ہوئی جرائم کی شرح کی وجہ دراصل  نوجوانوں کے میرٹ کااستحصال ہے

کراچی (       )پاک سرزمین پارٹی کے سینئر وائس چیئرمین انیس احمد خان ایڈووکیٹ نے مئیر کراچی کی جانب سے نوکریاں تمام جماعتوں میں تقسیم کی جانے کے بیان کی سخت مذمت کی ہے۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ نوکریاں سیاسی جماعتوں میں تقسیم نہیں ہونی چاہئیں بلکہ میرٹ کی بنیاد پر دی جانی چاہیے اور اس میں کسی بھی ادارے کے سربراہ کا کوئی عمل دخل نہیں ہوناچاہیے،مئیرکراچی اپنی ناکامی اور شہر کی تباہی کو اس سیاسی رشوت دیکر سیاسی جماعتوں  کو خریدنا چایتے ہیں، انہوں نے کہا کہ سیاسی بنیادوں پر نوکریاں تقسیم کرنا سراسر میرٹ کا قتل اور حق داروں کی حق تلفی اور اقرباپروی ہے جس کی وجہ سے میریٹ کا قتل ہو رہاہے بے اور میئر کراچی کے اس بیان نے بے روزگار نوجوانوں کو ایک بارپھر مایوس کر دیا ہے ،کراچی کی عوام دیکھیں کہ کس طرح سیاسی بھرتیاں کر کے سیاسی بندر بانٹ کرکے نوجوانوں کا معاشی قتل کیا جارہا ہے عوام انہیں پہچانیں کہ یہ وہ جماعت ہے جو کراچی کی نمائندہ ہونے کی دعوٰی کرتی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کے باصلاحیت نوجوانوں کے میرٹ کا استحصال کسی صورت برداشت نہیں کر سکتے اورمیرٹ کے بجائے سیاسی جماعتوں کو نوکریاں تقسیم کرنا سیاسی رشوت کے مترادف ہے  غربت اور بیروزگاری اور معاشی بدحالی  کی وجہ سے نوجوان ڈگریاں ہاتھوں میں لیے سرکاری محکموں اور نجی دفتروں کے دھکے کھاتے پھررہے ہیں کراچی میں بڑھتی ہوئی جرائم کی شرح اصل میں نوجوانوں کے میرٹ کااستحصال ہے انہوں نے کہا کر میئرکراچی نے نئی بھرتیوں کا اعلان کیا ہے تو خدا کے لئے اس میں بندر بانٹ کے بجائے قانون اور قواعد و ضوابط کی پابندی کو لازمی کیا جائے میرٹ اور انصاف کی بنیاد رکھتے ہوئے باصلاحیت و پڑھے لکھے نوجوانوں کو نوکریاں دی جائیں نہ کہ سرکاری ملازمین یا با اثر اور طاقت ور لوگوں میں بندر بانٹ کی جائے،اس سلسلے کو جب تک ختم نہیں کیا جائے گا ہم ترقی نہیں کرسکتے ہیں. انہوں نے کہا کہ معزز عدلیہ کو مئیر کراچی کے بغیر میرٹ سیاسی جماعتوں میں نوکریاں تقسیم کرنے کے بیان کا ازخود نوٹس لینا چاہئے تاکہ انہیں انہیں میرٹ کے خلاف بھرتیوں اور اس شہر و صوبے کے نوجوانوں کا معاشی استحصال سے روکا جاسکے.

 

کراچی ، جون 22 2017

پاکستان کی ٹیکسٹائل صنعت شدید بحران کا شکار ہے … رضاہارون، سیکریٹری جنرل پاک سرزمین پارٹی
وزیراعظم پاکستان اور وفاقی وزیرخزانہ ٹیکسٹائل صنعت کی جانب ہنگامی بنیادوں پر توجہ دیں
APTMA کے نمائندوں کے ساتھ بیٹھ کر مسائل کو فی الفور حل کیا جائے
پاک سرزمین پارٹی APTMAکو مطالبات کی مکمل حمایت کرتی ہے اور بھرپور تعاون کرے گی
تجارتی خسارہ کی بڑی وجہ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے حوالہ سے ناکام حکومتی پالیسیاں ہیں

پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون نے ملک کی معاشی صورتحال اور وفاقی حکومت کی ترجیحات پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری بیان انتہائی تشویشناک صورتحال کی جانب اشارہ کر رہے ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ٹیکسٹائل صنعت شدید بحران کا شکار ہے اور اس کے بنیادی وجہ وفاقی حکومت کی unfriendly پالیسیاں ہیں جس کے باعث آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے پاس اس کے سوا کوئی چارہ نہیں رہ گیا کہ وہ ملیں بند کرنے کا اعلان کر دیں۔ یہ ایک حقیقت ہے کہ بین الاقوامی مارکیٹ کے حالات بہتر نہیں لیکن اس کے باوجود مقابلہ کی اس دوڑ میں بنگلہ دیش، بھارت، چین اور ویتنام نے اپنی ٹیکسٹائل انڈسٹری کو زندہ رکھنے کیلئیخصوصی مراعات دیں تاکہ برآمدات کا حجم متاثر نہ ہو لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ پاکستان میں وفاقی حکومت سنجیدہ نہیں اور ایسے کوئی اقدامات نہیں اٹھائے گئے جس کے باعث آج ہماری ٹیکسٹائل صنعت دیگر ممالک کی صنعت کے ساتھ مقابلہ کرنے سے قاصر ہے۔ ہماری برآمدات 25 بلین سے کم ہو کر 20 بلین پر آ چکی ہے اور درآمدا ت کا حجم 40 بلین سے بڑھ کر 50 بلین تک جا چکا ہے یعنی تجارتی خسارہ 30 بلین ڈالر کا ہیجبکہ تاریخی طور پر یہ خسارہ 15 بلین تک رہا کرتا تھا۔ اس تجارتی خسارہ کی بڑی وجہ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے حوالہ سے ناکام حکومتی پالیسیاں ہیں؛ ٹیکسٹائل ہماری برآمدات کا 60 فیصد ہے، اس صنعت سے کئے گئے وعدوں کے مطابق سیلز ٹیکس ریفنڈ ایک سال سے زائد عرصے سے ادا نہیں کیا گیا، مہنگی بجلی کی فراہمی، سبسڈی مہیا نہ کرنا، پانی کی عدم دستیابی، ملک کی کرنسی کو ڈی ویلیو نہ کرنا، ریفنڈ پیمنٹ آرڈر Refund Payment Order (RPO)کے تحت صنعتوں کے واجبات کے عدم ادائیگی۔ حکومتی بے حسی کے باعث کی پاکستان کی ٹیکسٹائل انڈسٹری کے مالکان آج پیداواری لاگت کئی گنا بڑھ جانے کیباعث انٹرنیشنل مارکیٹ میں مقابلہ نہیں کر پا رہے اور ملیں بند کرنے کے بات کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں۔رضاہارون نے وزیراعظم پاکستان اور وفاقی وزیرخزانہ سے مطالبہ کیا کہ ٹیکسٹائل صنعت کے مسائل کی طرف ہنگامی بنیادوں پر توجہ دی جائے اور APTMA کے نمائندوں کے ساتھ بیٹھ کر ان کے مسائل کو فی الفور حل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی ملک کی معیشت کی تباہ حال صورتحال پر تشویش رکھتی ہے اور APTMA کو مطالبات کی مکمل حمایت کرتی ہے اور بھرپور تعاون کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت ہنگامی بنیادوں پر ٹیکسٹائل انڈسٹری کیلئے بجلی اور گیس کے ریٹ کم کر سبسڈی کا اعلان کرے، GIDC کے اطلاق پر نظرثانی کر کے ختم کیا جائے اور انڈسٹری سے وابستہ تمام بقایا جات فوری ادا کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ صنعت کا پہیہ چلے گا تو ملک ترقی کرے گا، روزگار پیدا ہو گا اور تجارتی خسارہ کم ہوگا۔

کراچی ، جون 21 2017

تحریک کو کامیابی سے چلانے میں خواتین کا مرکزی کردار ہوتا ہے، مصطفی کمال

سرجانی ٹاؤن کی عوام نے تمام جماعتوں کو آزمایا ہے 1.5 ہزار مہاجر نوجوان پابند سلاسل ہیں

سرجانی ٹاؤن کی خواتین نے افطار کا اہتمام کرکے پاکستان میں ایک نئی مثال قائم کردی ہے مصطفی کمال

 
کراچی (         ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ کسی بھی تحریک کو  کامیابی سے چلانے میں خواتین کا مرکزی کردار ہوتا ہے، میری والدہ نے اپنی بیماری کے عالم میں بھی مجھے اس شہر کی خدمت کرنے سے نہیں روکا، خواتین کی پاک سرزمین پارٹی کیلئے خدمات کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، سرجانی ٹاؤن کی خواتین نے پرتکلف افطار  ڈنر کا اہتمام کرکے پاکستان میں ایک نئی مثال قائم کردی ہےان خیالات کا اظہار سید مصطفی کمال نے پاک سرزمین پارٹی سرجانی ٹاؤن کی(شعبہ خواتین)  جانب سے افطار ڈنر کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر صدر انیس قائم خانی، مبر نیشنل کونسل صوفیہ شاہ، صدر کراچی ڈویژن آصف حسنین، نائب صدر عادل صدیقی، عرفان خان اور دیگر بھی  موجود تھے، افطار ڈنر کی عظیم الشان تقریب میں ماؤں، بہنوں، بچیوں نے بہت بڑی تعداد شرکت کی، سید مصطفی کمال نے کہا کہ پی ایس پی کو لاکھوں لوگوں کی جماعت بنانے میں ماؤں، بہنوں کا انتہائی اہم کردار ہے،انہوں نے کہا کہ مصطفی کمال نے اپنی تمام آسائشوں کو عوام کی خاطر چھوڑا،  سرجانی ٹاؤن کی عوام نے تمام جماعتوں کو آزمایا ہے 1.5 ہزار مہاجر نوجوان پابند سلاسل ہیں لیکن آج بھی صاف پانی، بجلی اور روزگار اور صحت کی بنیاد سہولیات کیلئے عوام ترس رہی ہے 2 لوگوں کی تنخواہ آج صرف بجلی کے بل کی مد میں چلی جاتی ہے،انہوں نے کہا کہ ظالم وہاں لوگ ہیں جو خاموشی سے ظلم سہتے ہیں ہم اپنے بچوں کو ایک روشن و تابندہ مستقبل دے کر جائیں گےانہوں نے کہا کہ عظیم الشان و پررونق تقریب منعقد کرنے اور اپنا آرام ہمارے لیے قربان کرنے پر اپنی ماؤں بہنوں کو سلام پیش کرتا ہوں

کراچی ، جون 20 2017

پاکستان کی تاریخ میں کسی جماعت نے 14 ماہ کی قلیل مدت میں عوام میں اتنی مقبولیت نہیں ملی جتنی پی ایس پی کو حاصل ہوئی ، مصطفی کمال

پاک سرزمین پارٹی کے پیغام کو گھر گھر پہنچانا ہے، مصطفی کمال

پیپلزپارٹی پارٹی سے پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کرنے والے کارکنان کو مبارکباد 

قصبہ علی گڑھ سے منتخب ہونے والوں نے اس علاقے کے عوام کی خدمت نہیں کی،مصطفی کمال

کراچی (           )پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں کسی جماعت نے 14 ماہ کی قلیل مدت میں عوام میں اتنی مقبولیت حاصل نہیں کی جتنی پاک سر زمین پارٹی نے حاصل کی ہے ،ہماری تقدیر ہمارے ہاتھوں میں ہیں، تقدیر کو بدلنے کیلئے آسمان فرشتے نہیں اتریں گے، عوام ہمارے شروع کیے ہوئے کارخیر میں اپنا حصہ ڈال کر آگے بڑھائے، پاک سرزمین پارٹی میں پیپلزپارٹی پارٹی کے کارکنان کے شمولیت پر مبارک باد پیش کرتا ہوں، ان خیالات اظہار سید مصطفی کمال نے  پی ایس پی قصبہ علی گڑھ کے زیر اہتمام میں افطار ڈنر اور بعد ازاں پاک کالونی میں جنرل ورکرز اجلاس میں ذمہ داران و کارکنان سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صدر انیس قائم خانی، کراچی ڈیژن کے صدر آصٖف حسنین، نائب صدر عادل صدیقی اور دیگر ذمہ داران و کارکنان بھی موجود تھے۔ سید مصطفی کمال نے کہا کہ قصبہ علی گڑھ سے منتخب ہونے والوں نے اس علاقے کے عوام کی خدمت نہیں کی آج اس علاقہ میں سڑکیں خستہ حال ہیں پینے کا صاف پانی اور دیگر بنیادی سہولیات تک میسر نہیں، ہر انسان اچھی بات کرتا ہے سبز باغ دکھائے جاتے ہیں لیکن عوام کے مسائل جوں کے توں ہیں انہوں نے کہاکہ گزشتہ ادوار اور 2013 میں بھی عوام نے ایک جماعت کو ووٹ دیا لیکن اب بھی آپ سے قربانی مانگی جارہی ہے، مصطفی کمال نے مئیر کا عہدہ چھوڑنے کے بعد اپنے خاندان کو کفالت کیلئے نوکری کی اپنے لیے شادی ہال اور پٹرول پمپ بنا سکتا تھا لیکن غلطی سے بھی غلط کام نہیں کیا، مراعات حاصل تھیں لیکن سب کچھ عوام کیلئے قربان کردیا ، انکو نے کہا کہ اب فیصلہ عوامی کے ہاتھوں میں ہے  مصطفی کمال اور انیس قائم خانی نے بے لوث عوامی خدمت کیلئے اپنی جان کو ہتھیلی پر رکھا ہے جس کے ناجائز شادی ہال ٹوٹتے ہیں وہ حکومت سے کس طرح عوام کے مسائل پر بات کرے گا، انہوں نے مزید کہا کہ مرنے کے بعد والی زندگی کی آسانی کیلئے ہم نے یہ راستہ اختیار کیا ہے عوام ہمارے ہاتھ مضبوط کریں

 

کراچی ، جون 19 2017

سید مصطفی کمال اور انیس قائم خانی کی جانب سے پوری پاکستانی قوم اور ٹیم کو مبارکباد
بھارت کو ناقابل فراموش شکست دوچار کرنے پر قومی ٹیم کے کپتان کپتان سرفراز احمد اور پوری ٹیم کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار

کراچی( ) چیئرمین پی ایس پی سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی کی جانب سے پاکستانی ٹیم اور پوری قوم کو چیمپئینز ٹرافی کا فائنل جیتنے پر دل کی گہرائیوں سے مبارکباد،چیئرمین و صدر پاک سرزمین پارٹی نے اس فتح کو تاریخی فتح قرار دیتے ہوئے بھارت کو ناقابل فراموش شکست دوچار کرنے پر قومی ٹیم کے کپتان کپتان سرفراز احمد اور پوری ٹیم کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ہے، اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ پاکستانی ٹیم نے ابتدا سے ہی جارحانہ کھیل پیش کر کے اپنی محنت لگن اور اتحاد سے فتح حاصل کی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی ٹیم نے قوم کو عید سے قبل عید کا تحفہ دیدیا ہے، انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ آیندہ آنے والے بڑے مقابلوں میں بھی پاکستانی ٹیم اپنا اور پوری قوم کا وقار مزید بلند کرے گی اور پاکستان میں ہم پاکستان انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی جلد دیکھیں گے.

 

کراچی ، جون 18 2017

پاک سرزمین پارٹی میں عوام کی شمولیت کا سلسلہ تیزی سے جاری

لاہور ڈسٹرکٹ کمیٹی میں ارکان کی تعداد میں اضافہ اور تنظیم نو کا جلد اعلان کیا جائے گا رضا ہارون

لاہور(        ) پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضا ہارون اور سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد کی لاہور ڈسٹرکٹ کے عہدیداران و کارکنان سے ملاقات، اس موقع پر لاہور میں پی ایس پی میں عوام کی بڑی تعداد کی شمولیت پر ان کا شکریہ ادا کیا گیا اور چیئرمین سید مصطفی کمال کی جانب سے ان کیلئے نیک تمناؤں کا پیغام پہنچایا، اس موقع پر ممبر نیشنل کونسل مبین قاضی و دیگر اراکین موجود تھے، رضاہارون اور ڈاکٹر صغیر نے پارٹی کی بڑھتی ہوئی مقبولیت اور عوام کا پاک سرزمین پارٹی پر اعتماد اور ان کی بڑی تعداد میں شمولیت کو دیکھتے ہوئے  تنظیم نو کا فیصلہ کیا، اس سلسلے میں لاہور ڈسٹرکٹ کمیٹی میں نئے چہروں کی شمولیت کے جلد انٹرویو منعقد کیے جائیں گے اور ڈسٹرکٹ کمیٹی کی تنظیم نو کا اعلان کیا جائے گا
 

چیئرمین پاک سر زمین پار ٹی سید مصطفٰی کمال کو لاہور ہائی کورٹ بار سے خطاب کرنے کی دعوت

لاہور (         ) پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون اور سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد کی لاہور میں ایک افطار ڈنر کے دوران لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر چوہدری ذوالفقار علی اور سیکرٹری عامر سعید راں سمیت مرکزی عہدیداروں سے ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں چوہدری ذوالفقار علی اور عامر سعید راں نے چیئرمین پاک سر زمین پار ٹی سید مصطفٰی کمال کو لاہور ہائی کورٹ بار سے خطاب کرنے کی دعوت دی، اس موقع پر سیکرٹری جنرل پی ایس پی رضاہارون نے سید مصطفٰی کمال کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ بار سے خطاب کی دعوت قبول کرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر، سیکرٹری اور مرکزی عہدیداروں کا شکریہ ادا کیا اور عید کے بعد جلد خطاب کی تاریخ کے اعلان کا یقین دلایا

 

کراچی ، جون 18 2017

مہاجروں کے نام پر سیاست کے بعد بھی عوام کو پینے کا صاف پانی، گلی محلوں میں کچرے کے ڈھیر اسپتالوں میں ادویات کی قلت کے علاوہ کچھ حاصل نہیں ہوا سید مصطفی کمال 

منتخب نمائندے عوام کے حقوق کیلئے ریلی نکالتے ہیں، لیکن احتجاجاً اپنی سیٹیں نہیں چھوڑتے

مصطفی کمال نے اس شہر پر 300ارب روپے اس لیے خرچ نہیں کیے تھے کہ اس شہر کا یہ حشر کیا جائے جو آج ہے

کراچی (        ) چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ 30 سالوں سے مہاجروں کے نام پر سیاست کے بعد بھی عوام کو پینے کا صاف پانی، گلی محلوں سے کچرے کے ڈھیر اسپتالوں میں ادویات کی قلت کے علاوہ کچھ حاصل نہیں ہوا، 3 مارچ کو ہم 2 لوگوں نے مرنے سے پہلے عوام کو سچائی سے آگاہ کرنے کیلئے اپنے حصے کی آواز لگائی، مصطفی کمال نے شہر کو دنیا کا بہترین شہر بنانےکے لئے اپنی راتیں قربان کیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیو کراچی ٹاؤن کے زیر اہتمام افطار ڈنر کی تقریب میں علاوہ موشی اور عہدیداران و کارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر پارٹی صدر انیس قائم خانی اور دیگر رہنما ان کے ہمراہ موجود تھے،  سید مصطفی کمال نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کرنے والوں نے اپنی سیٹوں اور عہدوں کو قربان کیا ہے مصطفی کمال نے اس شہر پر 300ارب روپے اس لیے خرچ نہیں کیے تھے کہ اس شہر کا یہ حشر کیا جائے جو آج ہے، انہوں نے کہا کہ  تمام مراعات کو اس لیے چھوڑا کیونکہ جن کمروں میں ہم بیٹھتے تھے وہاں عوام کی فلاح کی بات نہیں ہورہی تھی، نیوکراچی کے عوام گواہ ہیں کہ ہم نے اپنے حصے کا کام کردیا ہے ہمارے کردار کو لوگ جانتے ہیں اسی لیے آج پاک سرزمین پارٹی پورے ملک  اور جہاں کہیں پاکستانی آباد ہیں  ہمارا تنظیمی سیٹ اپ موجود ہے، انہوں نے کہا کہ اس شہر میں آئے روز ایک جماعت کے رہنماوں کے شادی ہال گرائے جاتے ہیں، آج منتخب نمائندے عوام کے حقوق کیلئے ریلی نکالتے ہیں، لیکن احتجاجاً اپنی سیٹیں نہیں چھوڑتے اختیارات کا رونا رونے والوں نے ووٹ لیتے وقت اختیارات کے نہ ہونے کا نہیں بتایا تھا،انہوں نے کہا کہ مہاجر نام پر سیاست کرنا والا مہاجروں کا سب سے بڑا دشمن ہے مہاجروں کو دیگر قومیتوں سے لڑوا کر سیاست کرنا آسان ہے لیکن اس دشمنی سے کیا حاصل ہوا؟ ہم قلعے بنا کر نہیں رہ سکتے، ہمیں آپس میں جڑنا ہوگا آپس میں اتحاد پیدا کرنا ہوگا اگر ہم متحد نہیں ہوئے تو یہ ظالم حکمران ہم پر مسلط رہیں گے، ہم لوگوں نے اگر اپنے حصے کا کام نہیں کیا توجب جب ہمارے نسلوں پر ظلم ہوگا تب ہماری قبروں پر عذاب نازل ہوگا، انہوں نے کہا کہ سندھ کی حکومت پاک سرزمین پارٹی کی ہوگی پڑھے لکھے نوجوان پاک سرزمین پارٹی کے پیغام کو عوام تک پہنچانے میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں.
 

 

پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال اور سیکریٹری جنرل رضا ہارون کی  یتیم بچوں کیلئے پاکستان میڈیا کلب کی جانب سے منعقدہ تقریب

 یتیم بچوں کیلئے ایسے پروگرام کا انعقاد خوش آیند ہے ہمیں ان باہمت بچوں کو دیکھ کر  بھی ہمت ملتی ہے، مصطفی کمال 

کراچی (        ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال اور سیکریٹری جنرل رضا ہارون کی  یتیم بچوں کیلئے پاکستان میڈیا کلب کی جانب سے منعقدہ تقریب *ایک شام باہمت بچوں کے نام* میں شرکت، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سید مصطفی کمال نے کہا کہ یتیم بچوں کیلئے ایسے پروگرام کا انعقاد خوش آیند ہے ہمیں ان باہمت بچوں کو دیکھ کر  بھی ہمت ملتی ہے، انہوں نے کہا کہ ان بچوں کی ہمت کو دیکھتے ہوئے ہم ایک باہمت معاشرہ تشکیل دے سکتے ہیں، پاکستان میڈیا کلب کی اس کاوش کو دل کی گہرائیوں سے سراہتے ہیں  اور ہر سطح پر ایسے رفاعی و فلاحی کاموں کی پزیرائی  کی جانی چاہیے، سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے اپنے خطاب میں کہا کہ  بدقسمتی سے ہمارے ملک میں بے سہارا اور یتیم بچوں کی کفالت کا کچھ ذمہ فلاحی تنظیموں نے اٹھا رکھا ہے لیکن حکومت کی مدد کے بغیر اس کا دائرہ کار وسیع نہیں ہوسکتا یتیموں کی کفالت ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے اور دین اسلام بھی اس کا درس دیتا ہے، ریاست یتیم بچوں کی ماں اور باپ ہوتی ہے، رسول اللہ کی حدیث ہے کہ جوشخص یتیم کی کفالت کرے گا قیامت کے روز وہ میرے ساتھ کھڑا ہوگا، انہوں سوال کیا کہ قیامت کے روز یہ حکمران کہاں کھڑا ہوں گے جس ملک میں 42 لاکھ بچے یتیم ہوں، 1 کروڑ بچے غذائی قلت کی شکار ہو، 2.5 کروڑ  بچے تعلیم سے محروم ہوں. انہوں نے کہا مزید کہا کہ ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے کہ وہ یتیموں کی کفالت کیلئے خصوصی اقدامات کرے اور ان  کی مکمل سرپرستی کرے تاکہ ان بچوں کو معاشرے کا بہترین شہری بنایا جاسکے اور یہ بچے اس ملک کی ترقی نہ اپنا نمایاں کردار ادا کریں

کراچی ، جون 18 2017

سید مصطفٰی کمال اور انیس قائم خانی کی انچولی امام بارگاہ شہداء کربلا میں منعقدہ معروف عالم دین علامہ طالب جوہری کی مجلس میں شرکت

چیئرمین پاک سر زمین پارٹی سید مصطفیٰ کمال ,صدر انیس قائم خانی کا JDC کا دورہ

جے ڈی سی کے رفاہی وفلاحی کاموں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں مصطفٰی کمال

شہادت حضرت علیؑ کی مجلس میں سید مصطفیٰ کمال وانیس قائم خانی کی شرکت

ہمارا منشور عوام کی فلاح و بہبود ہے جس کے حصول کے لئے ہم جدوجہد کررہے ہیں. مصطفٰی کمال

 
کراچی (       ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفٰی کمال اور صدر انیس قائم خانی نے انچولی امام بارگاہ شہداء کربلا میں بسلسلہ شہادت حضرت علیؑ   معروف عالم دین علامہ طالب جوہری کی مجلس میں شرکت کی. اس موقع پر پی ایس پی کے رہنما وسیم آفتاب ,افتخار عالم اور آصف حسنین بھی موجود تھے 
 
دریں اثناء پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفٰی کمال اور صدر انیس قائم خانی نے انچولی میں جعفریہ ڈیزاسٹر سیل کے مرکزی دفتر کا دورہ کیا اور امدادی سرگرمیوں کا تفصیلی جائزہ لیا اور وہاں پر موجود جنرل سیکرٹری سید ظفر عباس اور دیگر رضاکاروں سے ملاقات کی. اس موقع پر سید مصطفٰی کمال نے کہا کہ ہم جے ڈی سی کے رفاہی وفلاحی کاموں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، ظفر عباس اور انکی پوری ٹیم دکھی  انسانیت کی جس بےلوث طریقے سے خدمت کر رہی ہے وہ قابل تحسین ہے. انہوں نے کہا کہ ہمارا منشور بھی صرف عوام کی فلاح و بہبود ہے جس کے حصول کے لئے ہم جدوجہد کررہے ہیں اور جلد کامیابی سے ہمکنار ہونگے. انہوں نے  JDC کی جانب سے جاری تمام فلاح و بہبود کے کاموں میں  بھر پور تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی.   
 
 

پی ایس پی چیرمین مصطفی کمال کو لاہور ہائی کورٹ بار سے خطاب کرنے کی دعوت

 
لاہور () پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون اور سنیر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد سے لاہور میں ایک افطار ڈنر  میں لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر چوہدری ذوالفقار علی اور سیکرٹری عامر سعید راں سمیت مرکزی عہدیداروں سے  ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں لاہور ہائی کورٹ بار کے صدر جناب چوہدری ذوالفقار علی اور سیکریٹری عامر سعید راں نے پی ایس پی چیرمین سید مصطفی کمال کو لاہور ہائی کورٹ بار سے خطاب کرنے کی دعوت دی، اس موقع پر پی ایس پی سیکرٹری جنرل رضاہارون نے لاہور ہائی کورٹ بار سے مصطفی کمال کی خطاب کی دعوت قبول کی اور تاریخ کا اعلان عید کے بعد کیا جائے گا

کراچی ، جون 18 2017

کراچی کے مختلف علاقوں میں پانی کی قلت پر آصف حسنین کا اظہار مذمت

نام نہاد کراچی کے دعوےدار کرپشن کے سرپرست ہیں ٹینکر مافیا کی سرپرستی بھی مہاجر قوم کے نام نہاد داعوےدار کر رہے ہیں آصف حسنین 

پانی جیسی بنیادی ضرورت سے محروم کرنا  سراسر ظلم و زیادتی  ہے آصف حسنین 

پاک سرزمین پارٹی کراچی ڈویژن کے صدر آصف حسنین نے کراچی کے مختلف علاقوں میں پانی کی قلت پہ شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نے پانی جیسی بنیادی ضرورت سے محروم کرنا  سراسر ظلم و زیادتی  ہے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ  رمضان المبارک کے مقدس مہینے بھی جس طرح شہریوں کو تنگ کیا جارہا ہے وہ افسوس ناک ہےانہوں نے کہا کہ کراچی مختلف علاقوں میں پانی کی عدم فراہمی نے شہریوں کو مشکلات سے دوچار کردیا ہے دوسری جانب ٹینکر مافیا پانی کے کمی سے پریشان شہری کی مجبوری کا خوب فائدہ اٹھا رہےہیں،پانی کی کمی کا شکار پریشان شہری مہنگے داموں واٹرٹینکر خرید مجبور ہیں انہوں نے کہا کہ شہر میں پانی قلت کی وجہ سے شہریوں کی زوز مرہ کی معلومات زندگی بری طرح متاثر ہورہی ہے جس سے عوام میں شدید غم و غصہ کی لہر پائی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ نام نہاد کراچی کے دعوےدار کرپشن کے سرپرست ہیں ٹینکر مافیا کی سرپرستی بھی مہاجر قوم کے نام نہاد داعوےدار کر رہے ہیں کراچی کی عوام نے اپنے غصے کا اظہار کرنا شروع کردیا ہے اس سے پہلے کہ عوام کرپشن کی پشت پناہی کرنے والے بلدیاتی نمائندے کو اہنے غیض وغضب کا نشانہ بناےُ بلدیاتی نمائندے اپنا قبلہ درست کرلیں شہر کے پانی کے مسائل فوری حل کریں ٹینکر مافیا کے خلاف ایکشن لیں اور پورے کراچی میں پانی کی فراہمی یقینی بنائیں.انہوں نے وزیر اعلی سندھ مطالبہ کیا ہے کہ وہ کراچی کے مختلف علاقوں میں پانی کے بحران کا نوٹس لیں اور رمضان کے مہنے پانی بلاتطعل یقینی بنایا جائے۔

 

کراچی ، جون 17 2017

امت مسلمہ  حضرت علی (رضہ) کے مبارک زندگی پہ  عمل کرکے موجودہ مسائل سے نجات حاصل کرسکتی ہے۔ سید مصطفی کمال

تمام مسلم ممالک کو اہنے اتحاد کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے

حکومت  یوم علی کے موقع پر سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کو یقینی بنائے

کراچی (۔          ) امت مسلمہ حضرت علی (رضہ) کی مبارک زپه  عمل کر کے ہی اپنے مسائل سے نجات حاصل کرسکتی  ہے۔
یومِ حضرت علی (رضہ) کے موقعہ  پہ  پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے پاکستان ہاؤس سے جاری ایک پیغام میں کہا کے معاشروں میں عدل و انصاف ہو تو معاشرے خوشحال اور بہتری کی طرف گامزن ہوجاتے ہیں اور جن معاشروں میں انصاف نہ ہوں تو محرومیاں اور برائیاں جنم لیتی ہیں۔انہوں نے مزید کہا کے  ہم بھی ان کے نقش و قدم پر چلنے کی کوشش کرتے ہوےُ  وقت کے ظالم و جابر حکمرانوں سے اس معاشرے میں عدل و انصاف رائج کرنے کے لیئے جدوجہد کر رہے ہیں انہوں نے حکومت سے کہا کے یوم حضرت علی (رضہ) کے موقع پر ملک بھر میں فول پروف سکیورٹی کے انتظامات کو یقینی بنائیں۔

کراچی ، جون 16 2017

پی ایس پی میرپورخاص کی جانب سے میرپورخاص کے معززینِ شہر کے اعزاز میں افطار ڈنر
عوام الیکشن میں سندھ کے موجودہ حکمرانوں کو مسترد کردیں گے، میڈیا سے گفتگو
میرپورخاص ڈویژن کی تمام سیاسی، مذہبی، سماجی و کاروباری شخصیات کی بڑی تعداد میں شرکت

میرپورخاص ( ) چیئرمین پی ایس پی سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ پاک سرزمین پارٹی 2018 کے الیکشن میں صوبے سندھ میں حکومت ہماری ہوگی، سندھ کے حکمرانوں نے عوام کی زندگیوں کو اندھیرے میں دھکیل دیا ہے چھوٹے زمینداروں کو پانی نہیں مل رہا ہے حکومت اس مسئلہ کو حل کرے، معیاری تعلیم اور صحت کی سہولیات مہیا کرنا حکومت کی آئینی ذمہ داری ہے، 3.5 لاکھ بچے خوراک کی کمی کی وجہ سے ذہنی و جسمانی کمزوری کا شکار ہیں لیکن حکمران اپنی جیبین بھرنے میں مصروف ہیں، عوام الیکشن میں سندھ کے موجودہ حکمرانوں کو مسترد کردیں گے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاک سرزمین پارٹی میرپورخاص ڈویژن کی جانب سے شہر کی سیاسی، مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں ، سماجی شخصیات ، صنعتکاروں اور دیگر معززین کے اعزاز میں ایک پرتکلف افطار ڈنر میں میڈیا کے نمائندوں سے مختصر گفتگو کرتے ہوئے کیا، تقریب میں پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال، صدر انیس قائم خانی، سینئر وائس چیئرمین انیس ایڈووکیٹ، وائس چیئرمین وسیم آفتاب اور میر عتیق تالپور سمیت میرپورخاص ڈویژن کے عہدیداران و کارکنان بڑی تعداد میں شریک موجود تھے ، افطار ڈنر کی پر رونق تقریب میں پیپلز پارٹی، مسلم لیگ فنکشنل، مسلم لیگ (ن)، پی ٹی آئی جے یو آئی، جماعت اسلامی، سنی تحریک، دعوت اسلامی، علماء مشائخ کمیٹی، انجمن تاجران، ایوان صنعت و تجارت، بزنس کمیونٹی. سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے پروفیشنلز اور شہریوں نے میں بڑی تعداد میں شرکت کی

 

کراچی ، June 14 2017

کرکٹ ٹیم کی بہترین کارکردگی ٹیم اسپرٹ کا نتیجہ ہے، سید مصطفی کمال

کراچی (۔        ) چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال نے چیمپئینز ٹرافی کے سیمی فائنل میں پاکستانی ٹیم کی شاندار کارکردگی اور پہلی بار فائنل میں پہنچنے پر  تمام کھلاڑیوں کو خراج تحسین اور مبارک باد دیتے ہوےُ امید ظاہر کی  ہے کہ فائنل میں بھی پاکستانی کرکٹ ٹیم شاندار  کامیابی حاصل کرکے ملک اور قوم  کا سر فخر سے بلند کرے گی

 

کراچی ، June 11 2017

حیدرآباد ڈسٹرکٹ کی جانب سے حیدرآباد کے معززینِ شہر کے اعزاز میں افطار ڈنر چیئرمین پی ایس پی مصطفی کمال صدر انیس قائم خانی نے شرکا کا استقبال کیا

شہر کی تمام سیاسی و مذہبی اور سماجی شخصیات کی بڑی تعداد میں شرکت

حیدرآباد (        ) پاک سرزمین پارٹی حیدرآباد ڈسٹرکٹ کی جانب سے معززین شہر، سیاسی و مذہبی جماعتوں ، سماجی تنظیموں،تاجروں، صنعتکاروں، صحافی برادری کے اعزاز میں دی ایمپائر لان میں افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا ، افطار ڈنر کی تقریب میں پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی نے معزز مہمانوں کا استقبال کیا اس موقع پر سینئر وائس چیئرمین انیس آیڈووکیٹ، وائس چیئرمین وسیم آفتاب، ممبر نیشنل کونسل آفاق جمال، حیدرآباد ڈسٹرکٹ کے عہدیداران اور کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی ، افطار ڈنر کی تقریب میں پیپلز پارٹی، مسلم لیگ فنکشنل، پاکستان تحریک انصاف، جمعیت علمائے اسلام(سمیع الحق)،پیپلز لائر فورم، ، مسلم لیگ (ن) ، آل پاکستان مسلم لیگ، جماعت اسلامی سمیت یوتھ پارلیمنٹیرینز، مرکزی تنظیم عزاداران بزنس کمیونٹی و چیمبر آف کامرس کے عہدیداران اور اساتذہ اکرام ڈاکٹرز انجینئیرز فنکاروں شاعر ادیب اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والوں اور شہریوں نے حیدرآباد ڈسٹرکٹ کے افطار ڈنر میں بڑی تعداد میں شرکت کرکے تقریب کی رونق کو دوبالا کیا

کراچی ، June 11 2017

پاک سرزمین پارٹی کی جانب سے دعوت افطار کا اہتمام کیا گیا.

 

پی ایس پی کے دعوت افطار میں گورنر سندھ محمد زبیر، اسپیکر صوبائی اسمبلی آغا سراج درانی سمیت شہر کراچی کے معززین کی شرکت

پاک سرزمین پارٹی کی جانب سے THE BANQUET میں دعوت افطار کا اہتمام کیا گیا. چیئرمین سید مصطفی کمال، صدر انیس قائم خانی اور دیگر پارٹی رہنماؤں نے کراچی کے معززین کا استقبال کیا، افطار ڈنر کی تقریب میں گورنر سندھ محمد زبیر، اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی، سینیٹر سعید غنی، نثار کھوڑو وقار مہدی سہیل عابدی،سینیٹر عبدالحسیب خان، پی ٹی آئی سے عمران اسماعیل،مسلم لیگ ن سندھ کےجوائنٹ سیکرٹری حاجی چن زیب سنی تحریک کے رہنما شاہد غوری، قونصل جنرل فرانس، سیکریٹری پریس کلب مقصود یوسفی، اے ایچ خانزادہ، جبکہ فنکاروں میں غالب کمال، مانی، قیصر نظامی ارشد محمود، حنا دلپزیر اور نامور سماجی، فلاحی انجمنوں کے رہنماؤں،دانشور،ادیب، شعراء،پروفیسرز، ڈاکٹرز، انجینئرز ، وکلاء ،بزنس کمیونٹی،تجریہ نگار ،کالم نویس، صحافی برادری ، کھلاڑی اور مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام سمیت تمام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے بہت بڑی تعداد میں شرکت کی. پررونق اور پر ہجوم تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک اور پاکستان کی بقاء و سلامتی استحکام کیلئے خصوصی دعا کروا کر کیا گی

کراچی ، June 11 2017

پاکستان میں رنگ، نسل و زبان میں بٹی ہوئی عوام کو ایک کرنے آئے ہیں، سیاسی منشور عوام کی خدمت ہے، مصطفی کمال

اختلافات ہو سکتے ہیں مگر ہم اس کو دشمنی میں تبدیل نہیں ہونے دیں گے اختلافات ختم ہونگے تو پاکستان ترقی کریگا،

سید مصطفی کمال نے اتحاد ملی اور انیس قائم خانی نے تنظیم عزاداری پاکستان کے افطار میں شرکت

کراچی ()پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی نے علیحدہ علیحدہ جگہوں پر افطار ڈنر کی دعوت میں شرکت کی، سید مصطفی کمال نے اتحاد ملی اور انیس قائم خانی نے تنظیم عزاداری پاکستان کے افطار میں سینٹرل ایگزیٹیو کمیٹی اور نیشنل کونسل اراکین کے ہمراہ شرکت کی،اتحاد ملی کی افطار پارٹی میں موجود جید علماء اکرام ، مختلف سیاسی جماعتوں کے نمائندوں اور شرکا ء سے پاک سر زمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے گفتگو کر تے ہوئیے کہا کہ پاکستان میں رنگ، نسل و زبان میں بٹی ہوئی عوام کو ایک کرنے آئے ہیں، سیاسی منشور عوام کی خدمت ہے، انہوں نے کہاکہ پی ایس پی کا اپنا جھنڈا ہے لیکن اسے کارکنان کے ہاتھوں میں نہیں دیا ہم نے پاکستان کے جھنڈے کو تھاما کیونکہ جھنڈے لگانے پر اس شہر میں فسادات ہوتے تھے اس لیے ہم نے پاکستان کا جھنڈا اٹھایا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی بنیں، پاکستان کے جھنڈے کو مانے والے سے ہم نے کوئی جھگڑا نہیں کرنا اور پاکستان کا جھنڈا سب جماعتوں کا جھنڈا ہے انہوں نے کہا کہ اختلافات ہو سکتے ہیں مگر ہم اس کو دشمنی میں تبدیل نہیں ہونے دیں گے اختلافات ختم ہونگے تو پاکستان ترقی کریگا۔

کراچی ، June 11 2017

عوام کو بھی اب 2018 میں بار بار آزمائے ہوئے حکمرانوں کو مسترد کر کے سید مصطفٰی کمال جیسی باکردار قیادت کا ساتھ دینا ہوگا.، رضا ہارون 

کراچی ()پاک سر زمین پار ٹی کے سیکریٹری جنرل رضا ہارون اور سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد نے پریس کلب پر کراچی یونین آف جرنلسٹ کی دعوت افطار میں شرکت کی. اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رضا ہارون نے کہا کہ کراچی کے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے آبادی کے لحاظ سے کراچی کو نظر انداز کیا گیا ہے 70 فیصد کما کر دینے والے شہر کو لاوارث چھوڑ دیا گیا ہے، اس شہر میں پانی اور بجلی مانگنے والوں پر لاٹھی چارج کیا جا رہا ہے. انہوں نے کہا کہ 14 مئی پی ایس پی کے ملین مارچ کا دن تاریخ کا سیاہ ترین دن تھا جس میں پانی کے لئے احتجاج کرنے والوں پر لاٹھی چارج کر کے جمہوری دور میں آمریت کی بدترین مثال قائم کی گئی. انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے پچھلے دس سالوں میں عوام کو جو حقوق نہیں دیئے وہ اگلی بار منتخب ہو کر بھی نہیں دے گی، پیپلز پارٹی کے پاس کئی مرتبہ صدر، وزیراعظم اور وزیر اعلٰی سمیت، ایم این ایز اور ایم پی ایز کے عہدے رہے لیکن انہیں اگر مسائل حل کرنے ہوتے تو کر چکے ہوتے. انہوں نے کہا کہ عوام کو بھی اب 2018 میں بار بار آزمائے ہوئے حکمرانوں کو مسترد کر کے سید مصطفٰی کمال جیسی باکردار قیادت کا ساتھ دینا ہوگا.

کراچی ، June 11 2017

رکنِ قومی اسمبلی جمشید دستی کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ صدر پاک سرزمین پارٹی انیس قائم خانی

جمشید دستی کو فوری رہا کی جائے پنجاب حکومت سے مطالبہ۔ انیس قائم خانی

کراچی ( ) صدر پاک سرزمین پارٹی انیس قائم خانی نے منتخب رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کو گرفتار کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے، پاکستان ہاؤس سے جاری اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ ضمیر و وطن فروشوں کو حکومت کی جانب سے ڈھیل دی جاتی ہے لیکن متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے انسان دوست ممبر قومی اسمبلی کو تحویل میں لینا سراسر ناانصافی ہے، انہوں نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ جمشید دستی کو فوری رہا کیا جائے.

 

کراچی ، June 09 2017

پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا کہ 
ھم کراچی سمیت پورے پاکستان میں ایک تعلیم یافتہ پرامن اور بھائی چارہ پر مبنی معاشرہ تشکیل دینے کی جدوجہد کررہے ہیں جہاں سب ایک دوسرے سے سیاسی اور نظریاتی اختلاف رکھنے کے باوجو پیار محبت اور مہذب طریقے سے زندگی بسر کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے بزنس روڈ ٹاؤن میں منعقدہ  کارکناں کی اصلاحی پروگرام  سے خطاب کرتے ہوئے کیا  اس موقع پرٹاؤن ذمہ داران کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھے آنہوں نے کہا کہ ہم پڑھے لکھے اور مہذب پاکستانیوں کی اولادیں ہیں اور انسانیت کی خدمت ھمارا منشور ھے انہوں نے کہا کہ ہم پرامن رہ کر اپنے تمام مسائل  حل کرسکتے ہیں اگر ہم ایمانداری و خلوص کے سا تھ محنت کریں  انہوں نے کارکنان سے کہاکہ آپ لوگ تعلیم اور اچھےاخلاق کو اپنا پہچان  بناؤ۔کراچی کے شہریوں نے بہت تکلیف میں دن گزارے ہیں اور آج بھی وہ مشکلات سے دوچار ہیں ہم کراچی شہر اور لوگوں کی خدمت کے جذبے سے نکلے ہیں اس شہر سے جڑی ہر بری پہچان کو ایک روشن اور باوقار شناخت سے جوڑنا ہے اس کام کے لےُ سب سے پہلے پی ایس پی کے پارٹی سے وابستہ افراد کو بدلنا ہوگا تاکہ ہم ایک بہتر معاشرہ شہر اور ملک بناسکیں یہ بنیادی تبدیلی ہم صرف وصرف اپنے اچھے اخلاق و کردار کی بنیاد پہ کر سکیں گے پورا ملک آپ کو دیکھ رہا ہے آپ کے کاندھوں پہ بہت ذمہ داری ہے لہذا اپنی ذمہ داری کو محسوس کریں اور ایک اچھے معاشرے کی تشکیل میں میرا اور پارٹی کا ہاتھ مظبوط کریں. 
 
انہوں نے کہا کہ کراچی کا نوجوان مہذب پاکستانیوں کی اولاد ھے درحقیقت ان کو  رہنمائی اور تربیت کی ضرورت ھے انہوں نے کہا کہ 30سال سے ہم کو محرومی کے نعرے کی آڑ میں نوجوان نسل کو تعلیم اور اچھے کردار سے دور کرنے کی کوشش کی گئی ہے اس ذہن کو تبدیل کرنے میں کچھ وقت لگے گا لیکن   ہم اپنے رب سے مایوس نہیں ھیں اپنے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کررہے ہیں جس کااجر انشاءاللہ دنیا و آخرت میں  ضرور ملے گا   انہوں نے کہا کہ ہمارا  فلسفہ امن بھائی چارہ اور خدمت انسانیت کی سیاست ہے   مختلف سیاسی جماعتوں اور عوام الناس کی کثیر تعداد پاک سرزمین پارٹی میں شامل ہورہی ہے اورپاک سرزمین پارٹی کے مؤقف کی تائید کررہی  ہیں اور انشااللہ انے والے کل میں کراچی نہیں پورے ملک کی سب سے بڑی جماعت اپکی پارٹی پاک سرزمین ہارٹی ہو گی

کراچی ، June 09 2017

رمضان المبارک کے پہلے عشرے میں کراچی میں اسٹریٹ کرائمز اور لوٹ مار کی بڑھتی ہوئی وارداتوں 
پر محمد دلاور اور ارتضی فاروقی کا اظہار مذمت
کراچی شہری اپنے قیمتی سامان اور لاکھوں روپے کی نقدی سے محروم ہورہیں جو پولیس اور دیگر اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے،محمد دلاور اور ارتضی فاروقی
کراچی شہریوں کو جرائم پیشہ عناصر پیشہ عناصر کی رحم کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے،محمد دلاور اور ارتضی فاروقی

کراچی ( )پاک سرزمین پارٹی کے نیشنل کونسل کے ارکان محمد دلاور اور ارتضی فاروقی نے کہاکہ رمضان المبارک کے پہلے عشرے میں کراچی میں اسٹریٹ کرائمز اور لوٹ مار کی بڑھتی ہوئی وارداتوں پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اپنے ایک مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ کراچی شہر ملک کا سب سے بڑا تجارتی مرکز ہے یہاں کے شہریوں کے ساتھ لوٹ مار اور اسٹریٹ کرائمز کی بڑھتی ہوئی وارداتوں سے ایسا لگ رہا ہے کہ کراچی شہریوں کو جرائم پیشہ عناصر پیشہ عناصر کی رحم کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے اور ان کی جان و مال کے تحفظ کیلئے کوئی ٹھوس اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ کراچی کے مختلف علاقوں میں اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں میں مسلسل اضافی ہو رہا ہے اور شہری اپنے قیمتی سامان اور لاکھوں روپے کی نقدی سے محروم ہورہیں جو پولیس اور دیگر اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے. انہوں نے کہا کہ حکومت پولیس کی کارکردگی کو بہتر کرے ایماندار فرض شناس افسران کو تعینات کیا جائے، قابل اور ایماندار افسران کو آگے لائے نہ کہ ان کی جگہ نااہل اور من پسند افسران تعینات کرنے سے باز رہے اور پولیس اور دیگر اداروں کو جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ کرے انہیں سہولیات مہیا کی جائیں تاکہ سیکورٹی ادارے اپنے فرائض احسن طریقے سے سرانجام دے سکیں۔انہو ں نے حکومت سند ھ سے مطالبہ کیا ہے کہ عوام کی جان ومال کے تحفظ اور اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں کو روکنے کے لئے ٹھوس مبثت اقدامات بروئے کار لائے جائیں

 

کراچی ، June 08 2017

پاک سرزمین پارٹی عوام مخالف بجٹ کو یکسر مسترد کرتی ہے، کراچی کی معاشی اہمیت اور آبادی کے لحاظ سے اسپیشل پیکج مختص کیا جائے ، ڈاکٹر صغیر احمد

کراچی کے لئے 100 ارب ،حیدرآباد کے لئے 50 ارب اور دیگر کے لئے 25 ارب فی ڈسٹرکٹ مختص کئے جائیں

رمضان میں کوئی سبسڈی نہیں دی گئی جس سے عوام کو ریلیف ملتا

سندھ کی پچاس فیصد آبادی کراچی میں بستی ہے اورکرا چی کی عوام کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کیا جا رہا ہے

وزیر اعلی سندھ وفاق سے وسائل مانگتے ہیں لیکن خود نچلی سطح پر منتقل نہیں کرتے

وزیر اعلی سندھ سے نوکریاں میرٹ پر دینے کا مطالبہ

پی ایس پی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاوئس میں پرہجوم پریس کانفرنس خطاب

کراچی (       )پاک سر زمین پارٹی کے سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد نے کہا ہے کہ پاک سرزمین پارٹی عوام مخالف بجٹ کو یکسر مسترد کرتی ہے ،سندھ حکومت نے دیگر سیاسی جماعتوں سے مشاورت نہیں کی جو کہ غیر جمہوری رویہ ہے ،سندھ حکومت کے قول و فعل میں تضاد ہے ،اپوزیشن جماعت کی جانب سے مشاورت نہ کرنے پر خاموشی معنی خیز ہے لگتا ہے مفاہمت کی سیاست پھر شروع ہو چکی، وفاق سے بھی سوال ہے کہ سندھ بالخصوص کراچی کو لاوارث کیوں چھوڑ دیا گیا ہے؟ ملک کے معاشی حب کے لئے کوئی اسپیشل پیکج نہیں رکھا گیا ،ملک کے دیگر حصوں کے لئے کراچی سے کما کر رقم مختص کی جا سکتی ہے تو کراچی کے لئے کیوں نہیں؟ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ایس پی کے مرکزی دفتر پاکستان ہاوئس میں پرہجوم پریس کانفرنس خطاب کر تے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے لئے 100 ارب ،حیدرآباد کے لئے 50 ارب اور دیگر کے لئے 25 ارب فی ڈسٹرکٹ مختص کئے جائیں ، کراچی کی آبادی 2.5 کروڑ ہے جس کے لئے صرف 20 ارب روپے رکھے گئے جو سب سے زیادہ ٹیکس دینے والی عوام کے ساتھ مذاق کے مترادف ہے ،رمضان میں عوام کو کوئی سبسڈی نہیں دی گئی جس سے عوام کو ریلیف ملے نہ ہی قیمتوں کو قابو کرنے کے لیے کوئی اقدامات کئے گئے. موجودہ حکومت کے پچھلے 10 سالوں میں کراچی اور سندھ میں کوئی ترقی نہیں ہوئی. اس مو قع پر وائس چیئرمین وسیم آفتاب، اراکین نیشنل کونسل محمد دلاور، سید حفیظ الدین، 
ڈاکٹر یاسر اور صدر کراچی ڈویژن آصف حسنین بھی موجود تھے. انہوں ں نے کہا کہ سندھ کی پچاس فیصد آبادی کراچی میں بستی ہے جہاں ہر قومیت اور زبان بولنے والا آباد ہے لیکن کرا چی کی عوام کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کیا جا رہا ہے. انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ وفاق سے وسائل اور اختیارات کا سوال کرتے ہیں لیکن خود وسائل و اختیارات نچلی سطح پر منتقل نہیں کرتے. جس کی وجہ سے سکھر لاڑکانہ، بدین مٹھی تھر پارکر سمیت سندھ کے دیگر تمام ڈسٹرکٹس کی عوام پسماندہ زندگی گزارنے پر مجبور ہیں. انہوں نے کہا کہ ابھی بھی تھر میں بچوں کی اموات بڑھتی جا رہی ہیں لیکن حکومت کے کان پر جوں تک نہیں رینگ رہی. انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی کی تبدیلی کے بعد بھی سندھ میں کوئی تبدیلی نہیں آئی تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے. انہوں نے کہا کہ بجٹ 2016-17 میں مختص شدہ رقم میں سے بھی صرف نصف کے قریب جاری کی گئی. انہوں نے کہا کہ تعلیم کے شعبے میں سندھ میں مزید 5 فیصد تنزلی ہوئی ہے ،عوام کو پورے سندھ میں پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے اور حکمران ترقی کے دعوے کر رہے ہیں. پمپنگ اسٹیشن بند ہونے سے کراچی کو 6 کڑوڑ گیلن پانی کم فراہم کیا جا رہا ہے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں. انہوں نے سندھ میں ترقی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ لاڑکانہ کے لئے 90 ارب روپے کا پیکج کہاں لگا ہے وہاں کیا ترقی ہوئی؟ انہوں نے کہا کہ 18  دن کے دھرنے اور ملین مارچ کے باوجود جو وعدے کئے گئے وہ بھی پورے نہیں کئے گئے نہ K4 فیز 2 کے لئے رقم رکھی گئی نہ K الیکٹرک کے خلاف کوئی کارروائی کی گئی جبکہ K الیکٹرک کے خلاف ایف آئی آر کا مطالبہ کیا گیا تھا، K الیکٹرک نے ایگریمنٹ میں لکھا تھا کہ 3000 میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت موجود ہے جس کے بارے میں کوئی پوچھ گچھ نہیں کی جارہی بلکہ بغیر حساب کتاب کے K الیکٹرک کی ملکیت منتقل کی جا رہی ہے. انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلٰی سندھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سندھ میں نوکریاں میرٹ پر دی جائیں ،پروونشل فنانس کمیشن کے ذریعے اختیارات اور وسائل نچلی سطح پر منتقل کئے جائیں اور عوام کی زندگی بہتر بنانے کے لیے باتوں اور وعدوں کے علاوہ عملی اقدامات کئے جائیں

کراچی ، June 07 2017

پاک سر زمین پارٹی سندھ کے عوام دشمن صوبائی بجٹ کو یکسر مسترد کرتی ہے۔ ڈاکٹر صغیر احمد
کراچی پاکستان کی مجموعی آبادی کا 10% فیصد ہے اس لحاظ سے وفاق اور صوبے سے کراچی کو200 ارب روپے سالانہ ملنے چاہئیں
حیدرآ بادکے لئے 50ارب اورمیر پورخاص ،سکھر،نواب شاہ، لاڑکانہ کے لئے 25،25 ارب کا مطالبہ
پیپلز پارٹی کا سندھ حکومت کو 90% فیصد ریوینیو دینے والے کراچی شہر کو بری طرح نظر انداز کرناقابل افسوس ہے،
نام نہاد شہری نمائندوں کی مجرمانہ خاموشی باعث تشویش ہے جس کی بدولت آج سندھ اور بالخصوص شہری علاقے تباہی کے دہانے ہر پہنچ گئے
وفاقی حکومت کراچی کیلئے 100 ارب کے اسپیشل فنڈ کا اجراء کرے
وفاقی حکومت ملک کے لئے 70فیصد ریوینیو دینے والے شہر کے لئے 100ارب روپے کے اسپیشل فنڈ کا فوری اجراء کرے

کراچی( ) پاک سر زمین پارٹی کے سینئر وائس چیئرمین ڈاکٹر صغیر احمد نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ حکومت سندھ نے صوبے کیلئے 90 فیصد ریوینیو دینے والے شہر کراچی کوایک بار پھر بجٹ 2017-18 میں مکمل طور پر نظر انداز کر دیا ہے۔ کراچی ملک کی مجموعی آبادی کا 10فیصد، صوبہ سندھ کی آبادی کا کم و بیش 50 فیصد ہے لہٰذاآبادی کے تناسب سے کراچی کو وفاق سے بجٹ میں 100ارب روپے اور حکومت سندھ سے بھی100 ارب روپے ملنے چاہئیتھے۔حکومتِ سندھ نے سندھ کے تمام ڈویژنز کے مقابلے کراچی کیلئے سب سے کم بجٹ رکھا ہے، جو شہر پورے صوبے کو چلا رہا ہو اس کی تعمیر و ترقی کو نظر انداز کرنا سراسر ظلم ہے ۔وفاقی حکومت ملک کے لئے 70فیصد ریوینیو دینے والے شہر کے لئے 100ارب روپے کے اسپیشل فنڈ کا فوری اجراء کرے ۔ حکومتِ سندھ کارکردگی کے لحاظ سے اپنے تمام محکموں میں ناکام ہو چکی ہے اور اس کی سب سے بڑی مثال سندھ میں شرح خواندگی مزید5فیصد گر جانا ہے۔ڈاکٹر صغیر احمد نے پاک سر زمین پارٹی کا حکومت سندھ سے مطالبہ دہراتے ہوئے کہا کہ کراچی کے لئے 100ارب روپے ،حیدرآباد کے لئے 50ارب روپے ، میر پورخاص ،سکھر،نواب شاہ، لاڑکانہ کے لئے 25,25 ارب کا فوری اعلان کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ نام نہاد شہری نمائندوں کی مجرمانہ خاموشی باعث تشویش ہے جس کی بدولت آج سندھ اور بالخصوص شہری علاقے تباہی کے دہانے ہر پہنچ گئے ہیں ۔ انہوں نے وزیراعلیٰ سندھ کو تنقید کا نشانہ بنایا کہ حکومت سندھ کا اپوزیشن پارٹیوں اور سندھ کی سیاسی جماعتوں سے مشاورت نہ کر نا غیر جمہوری رویہ ہے۔
ڈاکٹر صغیر احمد کل بروز بدھ کراچی پریس کلب میں دوپہر 12 بجے سندھ بجٹ پراہم پریس کانفرنس سے خطاب کریں گے اور بجٹ پر پاک سرزمین پارٹی کا تفصیلی مؤقف پیش کریں گے۔

 

کراچی ، June 05 2017

کراچی کے بیشتر علاقوں میں پانی کی شدید قلت پر مذمت کی ہے، محمد دلاور ، ارتضی فاروقی ،عبداللہ شیخ

پاک سر زمین پارْٹی کے نیشنل کونسل کے اراکین محمد دلاور، ارتضی فاروقی اور عبداللہ شیخ نے اپنے مشترکہ بیان میں کہاکہ کراچی کے بیشتر علاقوں میں پانی کی شدید قلت پر مذمت کی ہے انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے شہری حکومت اور واٹر انیڈسیوریج بورڈ کی نااہلی کی وجہ سے نیو کراچی. نارتھ کراچی بلدیہ سمیت دیگر علاقوں میں بھی عوام کو پانی کے لیے دربدر کی ٹھوکریں کھانا پڑ رہی ہیں انہوں نے کہا کہ کراچی کے مختلف علاقوں میں پانی کے بحران نے شہری حکومت اورکراچی اینڈ واٹر سیوریج کی کارکردگی کھلے کرپشن کا نتیجہ ہے بلدیاتی نمائندے مئیر کراچی جب رشوت کا بازار گرم کریں گے تو شہر کولوٹنے والوں کے حوالے کرنے کے ساتھ یہ سب برابر شریک جرم ہیں عنقریب عوام ان کا احتسا ب کرنے والے ہیں انہوں نے کہا کہ شہر میں پانی قلت کی وجہ سے شہریوں کی زوز مرہ کی معلومات زندگی بری طرح متاثر ہورہی ہے جس سے عوام میں شدید غم و غصہ کی لہر پائی جاتی ہے انہوں نے وزیر اعلی سندھ مطالبہ کیا ہے کہ وہ کراچی کے مختلف علاقوں میں پانی کے بحران کا نوٹس لیں اور رمضان کے مہنے پانی بلاتطعل یقینی بنایا جائے


کراچی سمیت سندھ کے دیگر علاقوں میں خطرناک پتنگ بازی پر مکمل پابندی عائد کی جائے … رضاہارون
ننھے معصوم باسم خان کی پتنگ کی ڈور گلے میں پھنس جانے سے ہلاکت انتہائی تکلیف دہ اور افسوسناک ہے

حکومت اور انتظامیہ کی جانب سے اس اندوہناک واقعہ پرلاپرواہی برتنے اور خاندان کے ساتھ کسی قسم کا تعاون نہ کرنے کی بھرپور مذمت
والد کاشف اور اہل خانہ سے دلی تعزیت .. تدفین میں رضاہارون، ڈاکٹرصغیراحمد، سیدمبشرامام سمیت کارکنان کی بڑی تعداد میں شرکت 
 

کراچی ، جون 04 2017

پاک سرزمین پارٹی کے سیکریٹری جنرل رضاہارون نے گزشتہ روز نیو کراچی میں پی ایس پی کے عہدیدار کاشف خان کے چھ سالہ صاحبزادے محمد باسم خان کی پتنگ کی ڈور گلے میں پھنس کر ہلاکت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق 3 جون شام ساڑھ چھ بجے کاشف اپنی بیگم اور بیٹے کے ہمراہ افطار سے قبل سودا لینے موٹرسائیکل پر مارکیٹ جا رہے تھے جب کالا اسکول، سحرسینٹر خیام اسٹاپ، نیوکراچی کے نزدیک اچانک پتنگ کی ڈور آگے بیٹھے باسم کے گلے کو چیرتی ہوئی نکل گئی۔ باسم کو فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا لیکن مناسب طبی امداد میسر نہ ہونے کی وجہ سے باسم جانبر نہ ہو سکا۔

جناب رضاہارون نے حکومت اور انتظامیہ کی جانب سے اس اندوہناک واقعہ پرلاپرواہی برتنے اور خاندان کے ساتھ کسی قسم کا تعاون نہ کرنے کی بھرپور مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک جانب تو معصوم ننھا باسم زخمی ہونے کے بعد تڑپ تڑپ کرمناسب طبی امداد نہ ملنے کے باعث اپنی جان سے گیا اور دوسرے جانب حکومت اور انتظامیہ کا عمل انتہائی شرمناک اور افسوسناک ہے۔ انہوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ کا نوٹس لے، غمزدہ خاندان سے رابطہ کر کے ان کی داد رسی کی جائے، ہر ممکن تعاون کرے اور انتظامیہ کہ لاپرواہ اہلکاروں کے خلاف کارروائی کرے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کی مجرمانہ خاموشی تشویشناک اور بے حسی کی انتہا کہ وہ ایسے حادثات کی روک تھام کیلئے کوئی مناسب اقدامات اٹھاتے نظر نہیں آتے۔ انہوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر کراچی سمیت سندھ کے دیگر علاقوں میں خطرناک پتنگ بازی پر مکمل پابندی عائد کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی محمد باسم خان کی قربانی کو رائیگاں نہیں جانے دے گی اور مستقبل میں ایسے حادثات کو روکنے کیلئے وزیراعظم پاکستان اور وزیراعلی سندھ سے مطالبہ کرتی ہے کہ مزید کسی ایک بھی بچہ یا شہری کو پتنگ بازی اور اس کے نتیجے میں پیش آنے والے حادثات سے محفوظ رکھنے کیلئے پتنگ بازی پر پابندی کیلئے فوری اعلانات اور اقدامات کرے۔ انہوں نے مزید مطالبہ کیا کہ باسط کے پیش آنے والے حادثے کی مکمل تحقیقات کی جائیں اور اس کے ذمہ داروں کو گرفتار کر کے قانون کے مطابق سزا دلوائی جائے۔
سیکریٹری جنرل رضاہارون، سینئروائس چیئرمین ڈاکٹرصغیراحمد، ممبر نیشنل کونسل سیدمبشرامام، کراچی ڈویژن اور دیگر تمام علاقائی عہدیداروں وکارکنان نے گزشتہ رات باسط کی تدفین میں شرکت کی اور ان کے والد اور اہل خانہ سے دلی تعزیت کا اظہار کیا۔ اس موقع پر انہوں نے پارٹی چیئرمین سید مصطفی کمال اور صدر انیس قائم خانی کی جانب سے بھی دلی تعزیت، دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

کراچی ، June 04 2017

160گزشتہ رات لندن میں ہونے والے دہشتگردی کے حملے کی شدید مذمت ۔ چئیرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال
دہشتگردی کے حملے میں معصوم جانوں کے نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار۔ مصطفی کمال
دہشتگردی پوری دنیا کا مشترکہ مسلۂ ہے

کراچی (۔ ) چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال نے گزشتہ رات لندن میں ہونے والے دہشتگردی کے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہیکہ معصوم شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانا انتہائی بزدلانہ عمل ہے۔ پاکستان ہاؤس سے جاری ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خاتمے کے لئے مشترکہ حکمتِ عملی اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے دہشتگردی کے اس واقعہ میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین سے دلی تعزیت کی اور زخمیوں کے جلد صحتیابی کے لئے دعا کی۔

کراچی ، June 03 2017

ماہر قانون دان ایڈووکیٹ شریف الدین پیرزادہ کے انتقال پر سید مصطفی کمال اظہار افسوس

کراچی ( ) چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفی کمال نے پاکستان کے انتہائی معتبر و ماہر قانون دان ایڈووکیٹ شریف الدین پیرزادہ کے انتقال پر دلی دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ پاکستان ہاؤس سے جاری اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ شریف الدین پیرزادہ قانون کے شعبے سمیت ملک کی اہم ترین ذمہ داریوں پر فائز رہے اور ان کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مجھ سمیت پاک سرزمین پارٹی ایڈووکیٹ شریف الدین پیرزادہ کے اہل خانہ کے ساتھ دکھ کی اس گھڑی میں برابر کی شریک ہے۔ انہوں نے مرحوم کے لیے دعائے مغفرت اور سوگواران کیلئے صبر جمیل کی دعا بھی کی.

 

کراچی ، June 03 2017

سندھ حکومت و بلدیاتی ادارے سراسر کراچی اور کراچی کے باسیوں کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں، ڈاکٹر صغیر احمد
حکمران ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر کراچی کے لوگوں کا سودا کرنے میں مصروف ہیں

کراچی(۔ ) پاک سرزمین پارٹی کے سینئیر وائس چئیرمین ڈاکٹر صغیر احمد نے کہا کے کراچی کے عوام ماہ صیام کے اس بابرکت مہینے میں K الیکٹرک کی ہڈدھرمی اور بے حسی کی وجہ سے سحروافطار انتہاء اذیت و کرب میں گزار رہے ہیں۔ سندھ حکومت و بلدیاتی ادارے سراسر کراچی اور کراچی کے باسیوں کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں۔ حکمران ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر کراچی کے لوگوں کا سودا کرنے میں مصروف ہیں یہ اپنی تجوریاں رشوت کے پیسوں سے بھرنے میں صرف دلچسپی رکھتے ہیں۔ایسی صورتحال میں اعلی عدلیہ K الیکٹرک کی اس لوٹا ماری کا ازخود نوٹس لے اور کراچی کے لوگوں کو انکا لوٹا ہوا پیسہ اور اس اذیت سے فوری نکالنے میں اپنا کردار ادا کرے۔

کراچی ، June 02 2017

کراچی شہرکے ساتھ کے۔الیکٹرک کی ظلم و نا انصافی کی بنیاد ایم کیو ایم اور اس کے بانی نے رکھی ہے ۔ وسیم آفتاب
رمضان کے مقدس ماہ اور شدید گرمی میں کے۔الیکٹرک کی نا قص کارکردگی پر شدید مذمت 

پی ایس پی کے وائس چیئرمین وسیم آفتاب نے کہا ہے کہ کراچی شہر کے ساتھ K الیکٹرک کی ظلم و ناانصافی کی بنیاد MQM اور اس کے بانی نے رکھی ہے۔ سابق گورنر عشرت العباد، الطاف حسین اورایم کیو ایم k الیکٹرک کی انتظامیہ سے کروڑوں روپے ماہانہ بھتہ وصول کرتے رہے ہیں اور آج بھی k الیکٹرک کے غیر قانونی اقدامات کی پشت پناہی کی جارہی ہے۔ انہوں بے کہا کہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ، اووربلنگ k الیکٹرک کی انتظامیہ حکومتی اور سیاسی سرپرستی کے بغیر نہیں کرسکتی۔ وسیم آفتاب نے رمضان کے مقدس ماہ اور شدید گرمی میں K الیکٹرک کی ناقص کارکردگی پر شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی کے شہریوں کے 100 ارب سے ذیادہ لوٹنے کے باوجود K الیکٹرک بجلی کی پیداوار اور ترسیل کے نظام میں کوئی بہتری نہیں لائی۔ K الیکٹرک کو ملک کی بجلی کی ضروریات یا معاشی ترقی سے کوئی سروکار نہیں بلکہ انہیں صرف غربت کی چکی میں پسی ہوئی عوام سے اووربلنگ کی مد میں ناجائز منافع چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے مختلف علاقوں میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ K الیکٹرک انتظامیہ کی نااہلی اور مجرمانہ غفلت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ رمضان المبارک کے مہینے میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے باعث عوام ذہنی اذیت میں مبتلا ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کراچی جیسے بڑے شہر میں غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ قابل مذمت ہے۔ ماہ صیام میں سحر و افطار کے اوقات میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ عوام کے ساتھ دشمنی کے مترادف ہے. سپریم کورٹ کراچی شہر کے ساتھK الیکٹرک کی جانب سے جاری ظلم و ناانصافی کا نوٹس لے، رمضان المبارک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ سے عوام کو ریلیف فراہم کریں اور کراچی کی عوام کا پیسہ لوٹنے والوں کا احتساب کر کے عوام کی لوٹی ہوئی رقم واپس دلوائیں.

ملک بھر میں جاری توانائی کے بحران نے عوام کو پسماندہ زندگی گزارنے پر مجبور کر دیا ہےِ ترجمان پی ایس پی 

کراچی ( ) پاک سر زمین پارٹی کے ترجمان نے کہا ہے کہ ملک بھر میں جاری توانائی کے بحران نے عوام کو پسماندہ زندگی گزارنے پر مجبور کر دیا ہے، ملک کا معاشی پہیہ جام ہو چکا ہے، صنعتیں تباہ ہو رہی ہیں، روزگار کے مواقع پیدا نہیں ہو رہے، لوگ زندگی کی بنیادی سہولیات سے محروم ہیں لیکن وفاقی و صوبائی اسمبلیوں میں بیٹھے اراکین عوام کی حالت زار سے بے خبر ہیں. پاکستان ہاؤس سے جاری اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ ہمارے ملک کے سیاست دانوں کو صرف انتخابات میں عوام کی یاد آتی ہے اور بقیہ سال وہ خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہوتے ہیں. اس ساری صورتحال کا زمہ دار ہمارے ملک میں موجود لسانی، مذہبی اور خاندانی سیاست ہیں، پاکستان میں عوام کو اب خود اپنے مسائل کے حل کے لیے کھڑا ہونا ہوگا، عوام کو نہ صرف ان لوگوں کو مسترد کرنا ہوگا جو عوام سے جھوٹے وعدے اور دعوے کر کے ووٹ لیتے آئے ہیں بلکہ ایسی قیادت کا ساتھ بھی دینا ہوگا جو با کردار ہو، انہوں نے کہا کہ عوام کی خدمت کے جذبے سے سرشار اوردور اندیشی کے ساتھ ساتھ ملک و قوم سے مخلص ہونا پڑے گاانہوں نے کہا کہ سید مصطفی کمال ملک کے مسائل ہی اجاگر نہیں کر رہے بلکہ ان کا حل بھی بتا رہے ہیں لیکن موجودہ حکمرانوں کے ملک سے بالا تر زاتی مفادات عوامی مسائل کے حل کے عملی اقدامات میں سب سے بڑی رکاوٹ بنے ہوئے ہیں. انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے عوام کو حقیقی مسائل سے ہٹا کر دوسرے مسئلوں میں الجھایا ہوا ہے لیکن اب 2018 میں عوام سید مصطفی کمال کا ساتھ دے کر ثابت کریں گے کہ ملک میں اب صرف بنیادی مسائل پر سیاست ہوگی. انہوں نے کہا کہ پاکستان کو ترقی یافتہ ممالک کی صف میں سر فہرست کھڑا کرنا ہی ہمارا مقصد ہے.

 

 

کراچی ، June 01 2017

سینیٹر نہال ہاشمی کی جانب سے اداروں کے لئے دھمکی آمیز بیان قابل مذمت ہے،ترجمان پاک سرزمین پارٹی
غیرجمہوری، غیرآئینی اور غیر قانونی طور طریقوں سے تحقیقات پر اثر ڈالنا ماضی کا حصہ ہیں

کراچی( )پاک سرزمین پارٹی کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ سینیٹر نہال ہاشمی کی جانب سے اداروں کے لئے دھمکی آمیز بیان قابل مذمت ہے. انہوں نے کہا کہ حاضر سروس اور ریٹائرمنٹ کا اشارہ بظاہر JIT پر ہے جو سپریم کورٹ کے ماتحت کام کر رہی ہے، انہوں نے کہا کہ ملک میں کوئی بھی قانون و آئین سے مبرا نہیں ہے اور ادارے اپنی آئینی ذمہ داری پوری کر رہے ہیں اس لئے JIT میں شامل تمام ادارے اپنے اپنے حوالے سے قانونی چارہ جوئی کا حق محفوظ رکھتے ہیں، انہوں نے چیئرمین سینٹ سے بھی مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے سینیٹر کے اس انتہائی متنازعہ اور قابل اعتراض دھمکی آمیز بیان کا نوٹس لیں جو جمہوری دور میں عدلیہ اور تحقیقاتی اداروں کے کام میں اثرانداز ہونے کی کوشش ہے. انہوں نے کہا کہ غیرجمہوری، غیرآئینی اور غیر قانونی طور طریقوں سے تحقیقات پر اثر ڈالنا ماضی کا حصہ ہیں اور ان روایات کو دوہرایا جانا مناسب عمل نہیں۔